المورد ۔ ایک تعارف

المورد ملت اسلامیہ کی عظیم علمی روایات کا امین ایک منفردادارہ ہے۔ پندرھویں صدی ہجری کی ابتدا میں * یہ ادارہ اِس احساس کی بنا پر قائم کیا گیاہے کہ تفقہ فی الدین کا عمل ملت میں صحیح نہج پر قائم نہیں رہا۔ فرقہ دارانہ تعصبات اور سیاست کی حریفانہ کشمکش سے الگ رہ کر خالص قرآن و سنت کی بنیاد پر دین حق کی دعوت مسلمانوں کے لیے اجنبی ہو چکی ہے۔ قرآن مجیدجو اِس دین کی بنیاد ہے، محض حفظ و تلاوت کی چیز بن کر رہ گیا ہے۔ دینی مدرسوں میں وہ علوم مقصودبالذات بن گئے ہیں جو زیادہ سے زیادہ قرآن مجید تک پہنچنے کا وسیلہ ہو سکتے تھے۔ حدیث، قرآن و سنت میں اپنی اساسات سے بے تعلق کر دی گئی ہے اور سارا زور کسی خاص مکتب فکر کے اصول و فروع اور دوسروں کے مقابلے میں اُن کی برتری ثابت کرنے پر ہے۔

مزید پڑھیے

Join Us!

Have an Al-Mawrid account? Sign-in or Register for a free account

Why Al-Mawrid account


غامدی صاحب جواب دیں! قسط 10

اس پروگرام میں جاوید احمد غامدی مذہبی علما کے چند تلخ سوالات کے جواب دے رہے ہیں

کمنٹ

صدر کا پیغام

سب پہلے یہ جان لینا انتہائی اہمیت کا حامل ہے کہ المورد کی بنیاد کیا ہے اور وہ کونسا پیغام آگے پہنچانا چاہتا ہے ۔ اس پیغام کے حاملین کے لازم ہے کہ وہ پہلے اس پیغام کوخود اچھی طرح سمجھ لیں تاکہ وہ اس کو اپنے مخاطبین کے سامنے دلائل کے ساتھ پیش کر سکیں۔ اس بات کو بھی سمجھنے کی ضرورت ہے کہ اس پیغام کے اولین مخاطب اس کے حاملین خود ہیں۔ انہیں پہلے اسے خود سمجھنا چاہیے اورپھر دوسروں تک پہنچانا چاہیے ۔ اس پیغام کو سمجھنے کے علاوہ ان کے لازم ہے کہ انہیں اللہ تعالی کا صحیح فہم و ادراک حاصل ہو۔ اس فہم و ادراک کے بغیر کوئی مشن کامیابی سے ہمکنار نہیں ہو سکتا۔

Ghamidi's Personal Website
The query service has been completely revamped and questions are now tracked with industry standard software. You can ask your question now by clicking this link

Featured Article

  • TAGS:

Variant Readings

Qur’an

I have written in my treatise Mizan that the Qur’an is what is recorded in the mushaf, and which, except for some areas of North Africa, is recited by a vast majority of the Muslim ummah without the slightest variation. A question may arise on this: even if for the sake of discussion it is accepted that the Qur’an is only what has just been...

Read More