حالت احرام کی منہیات

حالت احرام کی منہیات


عن عبد اللَّهِ رضي الله عنه سُئِلَ رسول اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ ما يَلْبَسُ الْمُحْرِمُ من الثِّيَابِ فقال لَا يَلْبَسْ الْقَمِيصَ ولا الْعَمَائِمَ ولا السَّرَاوِيلَاتِ ولا الْبُرْنُسَ ولا ثَوْبًا مَسَّهُ زَعْفَرَانٌ ولا وَرْسٌ وَإِنْ لم يَجِدْ نَعْلَيْنِ فَلْيَلْبَسْ الْخُفَّيْنِ وَلْيَقْطَعْهُمَا حتى يَكُونَا أَسْفَلَ من الْكَعْبَيْنِ. (بخارى، رقم 1842)

حضرت عبداللہ بن عمر رضی اللہ عنہما سے روايت ہے کہ رسول الله صلی اللہ علیہ وسلم سے پوچھا گیا کہ محرم کون كون سے کپڑے پہن سکتا ہے؟ تو آپ نے فرمایا کہ قمیص، عمامہ، پاجامہ اور برنس (کن ٹوپ یا باران کوٹ) نہ پہنے اور نہ کوئی ایسا کپڑا پہنے جس میں زعفران یا ورس لگی ہو اور اگر جوتیاں نہ ہوں تو موزے پہن لے، البتہ اس طرح کاٹ لے کہ وه ٹخنوں سے نیچے ہو جائیں۔

عن بن عُمَرَ رضي الله عنهما أَنَّ رَجُلًا سَأَلَ رَسُولَ اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ ما يَلْبَسُ الْمُحْرِمُ من الثِّيَابِ فقال رسول اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لَا تَلْبَسُوا الْقُمُصَ ولا الْعَمَائِمَ ولا السَّرَاوِيلَاتِ ولا الْبَرَانِسَ ولا الْخِفَافَ إلا أَحَدٌ لَا يَجِدُ النَّعْلَيْنِ فَلْيَلْبَسْ الْخُفَّيْنِ وَلْيَقْطَعْهُمَا أَسْفَلَ من الْكَعْبَيْنِ ولا تَلْبَسُوا من الثِّيَابِ شيئا مَسَّهُ الزَّعْفَرَانُ ولا الْوَرْسُ. (مسلم، رقم 2791)

حضرت ابن عمر رضی اللہ عنہما سے روایت ہے کہ ایک آدمی نے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے پوچھا کہ احرام باندھنے والا كيسے کپڑے پہنے؟ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا:نہ قميصيں پہنو ، نہ عمامےباندهو،نہ شلواريں پہنو، نہ موزے پہنو، سوائے اس شخص كےجس كے پاس جوتى نہ ہو،وہ موزوں کو اتنا کاٹ لے کہ وه ٹخنوں سے نیچے ہو جائیں اور تم ایسے کپڑے نہ پہنو جس میں زعفران اور ورس ہو۔

عَنْ عُثْمَانَ بنِ عَفَّانَ يقول قال رسول اللَّهِ صَلَّى اللهُ عَلَيْهِ وَسَلَّمَ لَا يَنْكِحُ الْمُحْرِمُ ولا يُنْكَحُ ولا يَخْطُبُ. (مسلم، رقم 3446)

حضرت عثمان بن عفان (رضی اللہ عنہ) سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا: نہ كوئى احرام والا نکاح كرے اور نہ اس سے نكاح کیا جائے اور نہ وه پیغام نکاح دے۔

________




Articles by this author