صفا و مروہ کا طواف

صفا و مروہ کا طواف


عن جَابِرِ بن عبد اللَّهِ --- اسْتَقْبَلَ (رسول الله صلى الله عليه وسلم فِيْ أَثْنَاءِ حَجِّهِ) الْقِبْلَةَ فَوَحَّدَ اللَّهَ وَكَبَّرَهُ وقال لَا إِلَهَ إلا الله وَحْدَهُ لَا شَرِيكَ له له الْمُلْكُ وَلَهُ الْحَمْدُ وهو على كل شَيْءٍ قَدِيرٌ لَا إِلَهَ إلا الله وَحْدَهُ أَنْجَزَ وَعْدَهُ وَنَصَرَ عَبْدَهُ وَهَزَمَ الْأَحْزَابَ وَحْدَهُ ثُمَّ دَعَا بين ذلك قال مِثْلَ هذا ثَلَاثَ مَرَّاتٍ ثُمَّ نَزَلَ إلى الْمَرْوَةِ حتى إذا انْصَبَّتْ قَدَمَاهُ في بَطْنِ الْوَادِي سَعَى حتى إذا صَعِدَتَا مَشَى حتى أتى الْمَرْوَةَ فَفَعَلَ على الْمَرْوَةِ كما فَعَلَ على الصَّفَا حتى إذا كان آخِرُ طَوَافِهِ على الْمَرْوَةِ. (مسلم، رقم 2950)

حضرت جابر بن عبداللہ (رضی اللہ عنہ) سے روايت ہے كہ ... آپ صلى الله عليہ وسلم نے (اپنے حج كے دوران ميں) بیت اللہ کو دیکھا اور قبلہ کی طرف رخ کیا اور اللہ کی توحید اور اس کی بڑائی بیان کی اور فرمایا: اللہ کے سوا کوئی معبود نہیں، وہ اکیلا ہے، اس کا کوئی شریک نہیں، اسی کے ليے ملک ہے اور اسی کے لیے ساری حمد ہے اور وہ ہر چیز پر قادر ہے، اللہ کے سوا کوئی مبعود نہیں، وہ اکیلا ہے، اس نے اپنا وعدہ پورا کیا اور اپنے بندے کی مدد کی اور اس نے اکیلے سارے لشکروں کو شکست دی، پھر آپ نے دعا کی اور تین مرتبہ اسی طرح فرمایا، پھر آپ مروہ کی طرف اترے، یہاں تک کہ جب آپ کے قدم مبارک بطن کی وادی میں پہنچے تو آپ دوڑے، یہاں تک کہ وه چڑھ گئے اور پھر آہستہ چلے ،یہاں تک کہ مروہ پر آگئے اور مروہ پر بھی آپ نے اسی طرح کیا، جس طرح کہ صفا پر کیا تھا، یہاں تک کہ آپ کا آخر طواف مروہ پر تھا۔

________




Articles by this author