عین موت کے وقت ایمان لانے کی حیثیت

میں یہ جاننا چاہتا ہون کہ اتمام حجت کے بعد جب عذاب اتر آئے تب عین جنگ کے دوران اگر کوئی منکر ایمان لے آئے اور پھر اسے قتل کر دیا جائے تو کیا وہ فرعونی کی طرح کافر ہی قرار پائے گا یا اس کا ایمان قابل قبول ہو گا؟ برائے مہربانی وضاحت فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔