تحقیق اور تقلید

سوال یہ ہے کہ کیا مجھ پر صرف وہی چیزیں فرض ہیں اور میں انہی باتوں کے لیے جواب دہ ہوں جومیں نے بذاتِ خود نیک نیتی سے تحقیق کر کے قرآن و حدیث سے اخذ کی ہوں؟ کیونکہ میں سمجھتا ہوں کہ اللہ تعالیٰ نے مجھے اتنی صلاحیت تو دی ہے کہ میں اندھی تقلید کرنے کے بجائے ، خود اسلام کو سمجھوں یا کم از کم سمجھنے کی کوشش تو کرسکوں ، اور پھر یہ کہ میں رائج الوقت اسلام سے پوری طرح مطمئن بھی نہیں ہوں۔ آپ کی اس بارے میں کیا رائے ہے

پڑھیے۔۔۔