صحابہ كا مقام

غامدی صاحب فرماتے ہيں كہ دين كی كامل وضاحت صرف رسول صلی الله عليہ و سلم اور ان كے صحابہ كرام ہی كر سكتے ہيں۔ ان كے بعد كوئی يہ كام نہيں كر سكتا۔ نتيجة كوئی مسلمان كسی كو بھی كافر قرار نہيں دے سكتا۔ ميرا سوال يہ ہے كہ اگر صحابہ كا مقام يہی ہےتو جو لوگ ان كو گالياں ديتے اور برا بھلا كہتے ہيں ان كے بارے ميں آپ كی كيا رائے ہے؟

پڑھیے۔۔۔