جنازے کے مسائل

میرا سوال یہ ہے کہ ہمارے ہاں عموماً یوں ہوتا ہے کہ جب کوئی مر جاتا ہے تو لوگ وہاں جاتے ہیں۔ نماز جنازہ پڑھی جاتی ہے۔ اور پھر مردے کو دفن کر دینے کے بعد اس کی قبر پر پھول اور اگربتیاں جلائی جاتی ہیں۔ پھر اسی لوگ کھانا کھا کر پھر اس کی مغفرت کے لیے دعا کرتے ہیں اور فاتحہ پڑھتے ہیں۔ تو سوال یہ ہے کہ شریعت میں اس سب کو جو کہ بیان کیا گیا ہے کیا جائز مانا جاتا ہے؟ اور جب ہم اپنے والد یا اور کسی عزیز کی قبر پر جاتے ہیں تو وہاں ان کے لیے قرآن کی کچھ آیات پڑھ کر اس کی نذر کر دی جاتی ہیں تو میں یہ پوچھنا چاہتا ہوں کہ کیا دعا کا یہی صحیح طریقہ ہے؟ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔