• TAGS:
  • {tag}
  • {/exp:tag:tags}

پردے سے متعلق چند سوالات

١۔ جاوید احمد غامدی صاحب نے اپنی کتاب میزان میں سورہ نور کی آیت ٦١ کا ترجمہ کرتے ہوئے لکھا ہے کہ --مرد عورت اکٹھے کھاؤ یا الگ الگ اس میں تم پر کوکوئی گناہ نہیں۔ اس ترجمے سے تو اکٹھے کھانے کا جواز بنتا ہے لیکن جب میں قرآن کی دوسرے ترجمے دیکھتا ہوں جیسا کہ حواشی میں جو کہ جونا گڑھ کے مولانا کا ہے تو وہ یہ تاثر دیتے ہیں کہ اس سے مراد مردوں کا مل کر کھانا ہے اور وہ اس ترجمے میں عورت کے جنس کا ذکر ہی نہیں کیا گیا۔ اور جب میں عربی آیت بھی دیکھتا ہوں تو اس میں مرد اور عورت کا کوئی ذکر نہیں۔ تو میں یہ پوچھنا چاہتا ہوں کہ آپ کیسے ثابت کریں گے کہ غامدی صاحب کا ترجمہ درست ہے؟

٢۔ میں نے ایک عرب سکالر کی کتاب میں پڑھا ہے کہ حضرت عمر کے دور تک اسلامی کلچر ایک جیسا تھا۔ کیا یہ صحیح ہے؟ اگر ہاں تو اس کے بارے میں کوئی دلائل دیں۔

٣۔ عورت کے پردے کی کم سے کم حد کیا ہے؟

٤۔کیا ایک مسلمان عورت کے لیے سر کو ڈھانپنا ضروری ہے؟ اگر کوئی مسلم عورت اپنے سر کو نہیں ڈھانپتی تو کیا یہ گناہ ہے؟

برائے مہربانی تفصیلی وضاحت فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔