غیر مسلم حکومت کے تحت کام کرنا

کیا کسی مسلمان کے لیے یہ بات جائز ہے کہ وہ کسی غیر مسلم حکومت کے تحت کام کرے ۔ اگر کسی غیر مسلم حکومت کے تحت کام کرنا جائز ہے تو پھر اس کے حدود کیا ہیں اور اس میں کیا پابندیاں اختیار کرنا ہوں گی؟

پڑھیے۔۔۔

یوسف علیہ السلام اور حکومت مصر

یوسف علیہ السلام اپنے زمانۂ حکومت میں کیا حکومت مصر کے ملازم تھے یا وہ ملک چلانے کے لیے پورے اختیارات رکھتے تھے؟

پڑھیے۔۔۔

رسول اور اقتدار

میرا سوال یہ ہے کہ رسول اقتدار حاصل کرنے کی کوشش کیوں کرتے ہیں؟برائے مہربانی رہنمائی فرمائیے۔

پڑھیے۔۔۔

خلافت امير معاوية

ميرا سوال آپ كے مضمون ''خلافت راشدہ كا تعارف'' كے بارے میں ہے۔اس مضمون کے مصنف کے مطابق امیر معاویہ بھی خلفاء راشدین میں سے تھے۔ اگر ہم یہ مان جائیں تو ان كی گستاخیوں کا کیا مطلب ہو گا جو انھوں نے مسجد میں حضرت علیؓ كی شان ميں كيں۔ یہ کہ یہاں مصنف رک کیوں گیا، اس نے یزید بن معاویہ کا ذکر کیوں نہیں کیا، اور آل مروان کا ذکر کیوں نہیں کیا؟ دوسری بات یہ کہ جو مصنف نے بیان کیا ہے اسی طرح میں نے غامدی صاحب سے سنا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے بنی اسحاق اور بنی اسماعیل کوخصوصی طور پر نبوت کے لیے منتخب کیا ہے ، تو جب محمدؐ آئے تو بنی اسماعیل ان کا پیغام پھیلانے کے ذمہ دار بنے،اگر ہم یہ قبول کر لیں تو شیعہ مسلک کا امامت کے بارے میں جو دعوٰی ہے وہ کیوں غلط ہے؟ وہ یہی بات بہت مختلف انداز میں کہتے ہیں کہ نبیؐ کے بعد پورے قریش کو نہیں بلکہ صرف بنو ہاشم کو منتخب کیا گیا تھا۔ وضاحت فرمائیے۔

پڑھیے۔۔۔

جہاد اور حکومت

غامدی صاحب کہتے ہیں کہ جہاد صرف باقاعدہ حکومت ہی کر سکتی ہے۔ اگر ایسا ہی ہے تو مجاہدین آزادی، مثلاً مجاہدین کشمیر یہ حکومت کہاں سے حاصل کریں؟

پڑھیے۔۔۔

انفرادی جہاد

موجودہ ظروف وشرائط میں آپ امریکا کے خلاف جہاد افغانستان کو کس نظر سے دیکھتے ہیں؟ کیا اس کو جہاد کہہ سکتے ہیں؟ کیا کسی خاص شرائط میں انفرادی جہاد جائز ہے؟ مثلاً کسی اسلامی ملک پر کافر یلغار کریں اور حکومت وقت بزدل ہو کر کفار کی ہم نوا ہو جائے۔ اس صورت حال میں دین کا تقاضا کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

اسلام کا نظام خلافت

اسلام کا نظام خلافت صرف چند دہائیوں تک ہی کیوں چل سکا؟ کیا جیسا کہ ڈاکٹر اسرار صاحب حدیث بیان کیا کرتے تھے کہ نبی ؐ نے خود ہی فرما دیا تھا کہ خلافت اتنے سالوں بعد ختم ہو جائے گی اور ملوکیت آ جائے گی۔ اس کے بعد بھی کہانی بیان ہوتی ہے۔ اس بارے میں آپ کی کیا رائے ہے؟ کیا یہ طے شدہ پروگرام تھا کہ اتنے سالوں بعد خلافت ختم ہو جائے گی؟ یا اسلام اپنے پیروکاروں کی درست تربیت نہیں کر پایا؟

پڑھیے۔۔۔

عالمی حکومت کا خواب

جاوید احمد غامدی صاحب نے ایک ٹی وی پروگرام میں فرمایا: اب انسان اس بات کا حق رکھتا ہے کہ وہ ایک عالمی حکومت کا خواب دیکھے۔ اس بات نے میرے ذہن میں بہت الجھن پیدا کر دی ہے ۔ میں اس بات کو پوری طرح سمجھنا چاہتا ہوں۔ وضاحت فرماے؟

میرا دوسرا سوال یہ ہے کہ کچھ لوگ چند روایات نقل کرتے ہوئے یہ نقطہ نظر اختیار کرتے ہیں کہ اگر خالد بن ولید رضی اللہ تعالی چند نفوس کو لے کر ساٹھ ہزار پر مشتمل ایک طاقتور فوج کو شکست دے سکتے ہیں تو پھر اس قرآنی آیت کا کیا مطلب ہے جو غامدی صاحب کے مطابق اس بات کو لازم قرار دیتی ہے کہ مسلمانوں کو اس وقت تک جنگ نہیں کرنا چاہیے جب تک ان کی حربی قوت دشمن کی حربی قوت کے کم از کم نصف برابر نہ ہو؟

پڑھیے۔۔۔

حکومت کا زبردستی زمین ہتھیانا

میرا سوال یہ ہے کہ کیا قرآن کے مطابق کوئی ریاست ایسا قانون بنا سکتی ہے جس کے مطابق وہ کسی آدمی سے اس کی ضرورت سے زیادہ زمین اگر اس کے پاس ہو تو وہ اس سے لے کر ضرورت مندوں میں تقسیم کر دے؟ یا ایسا قانون کسی اسلامی ریاست میں نہیں لگایا جا سکتا؟ میرا دوسرا سوال یہ ہے کہ اگر نکاح کے وقت لڑکا سنی اور لڑکی شیعہ فرقے سے تعلق رکھتی ہو اور اس بات پر بحث ہو جائے کہ سنی امام نکاح پڑھائے گا یا شیعہ امام تو ایسی صورت حال میں بہتریں حل کیا ہو گا؟ برائے مہربانی وضاحت فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔

حضرت امیر معاویہ رضی اللہ عنہ

میں آپ کی خدمت میں یہ سوال عرض کرنا چاہتا ہوں کہ کیا امیر معاویہ رضی اللہ عنہ نے قرآن کی آیات کی کتابت کی ہے؟ جواب کا حوالہ بھی پیش کریں۔ اور دوسرا سوال یہ کہ سورہ مائدہ کی آیت "والله يعصمك من الناس" کے نزول کے بعد کیا نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی پہرہ داری کسی نے کی ہے؟ برائے مہربانی تفصیل سے وضاحت فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔

جمہوریت كا اسلامي تصور

غامدی صاحب کا کہنا ہے کہ جمہوریت ٹھیک ہے، جس کی بنیاد اکثریت پر ہے، مگر قرآن میں ہے کہ اکثر لوگ نہیں جانتے، اور یہ بات قرآن میں تقریباً ٩٢ مقامات پر آئی ہے۔ اسی طرح طالوت اور جالوت کا واقعہ ہے کہ جب لوگوں نے کہا کہ جالوت کو ہمارا بادشاہ بنا دیں مگر نبی نے کہا کہ طالوت تمھارا بادشاہ ہو گا۔ یہاں پر اکثریت کی رائے کو پسند نہیں کیا گیا۔ برائے مہربانی وضاحت فرمائیے۔

پڑھیے۔۔۔

عالمی حكومت، جہاد ميں كم سے كم حربی قوت

جاويد احمد غامدی صاحب نے ايك ٹی وی پروگرام ميں فرمايا: اب انسان اس بات كا حق ركھتا ہے كہ وہ ايك عالمی حكومت كا خواب ديكھے۔

اس بات نے ميرے ذہن ميں بہت الجھن پيدا كر دی ہے ۔ ميں اس بات كو پوری طرح سمجھنا چاہتا ہوں۔ وضاحت فرمائيے۔

ميرا دوسرا سوال يہ ہے كہ كچھ لوگ چند روايات نقل كرتے ہوئے يہ نقطہ نظر اختيار كرتے ہيں كہ اگر خالد بن وليد رضی الله تعالی چند نفوس كو لے كر ساٹھ ہزار پر مشتمل ايك طاقتور فوج كو شكست دے سكتے ہيں تو پھر اس قرآنی آيت كا كيا مطلب ہے جو غامدی صاحب كے مطابق اس بات كو لازم قرار ديتی ہے كہ مسلمانوں كو اس وقت تك جنگ نہيں كرنا چاہيے جب تك ان كی حربی قوت دشمن كی حربی قوت كے كم از كم نصف برابر نہ ہو؟

پڑھیے۔۔۔