مزار پر دعا کرنا

مزار پر دعا کرنا کیسا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

کیا دعا سے تقدیر بدل سکتی ہے

تقدیر تو لکھی جا چکی ہے پھر دعا سے کیا ہو سکتا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

حضرت آدم علیہ السلام کی دعا

فضائل اعمال میں ہے کہ حضرت آدم علیہ السلام کو جب معافی دی گئی تو آپ نے اللہ پاک سے یہ دعا کی کہ مجھے اپنے حبیب کے صدقے معاف کر دو۔ اللہ پاک نے آدم علیہ السلام سے یہ پوچھا کہ آپ نے یہ کہاں سے پڑھا ہے؟ آدم علیہ السلام نے ان سے درخواست کی کہ میں نے آپ کے ساتویں آسمان کے اوپر یہ لکھا ہوا دیکھا تھا کہ یہ آپ کے رسول ہیں تو اللہ تعالیٰ نے آپ کو معاف کر دیا۔ جبکہ ہم نے تو آج تک یہی پڑھاہے ، قرآن میں آتا ہے کہ اللہ پاک نے آپ کو یہ کلمات سکھائے کہ ’رَبَّنَا ظَلَمنَا...‘ ۔ کیا یہ قصہ قرآن و حدیث سے ثابت ہے ؟

پڑھیے۔۔۔

نماز میں درود ابراہیمی

نماز میں تشہد کے بعد پڑھے جانے والے درود ابراہیمی کی اصل حقیقت کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے لیے درود و سلام

قرآن مجید میں اللہ تعالیٰ فرماتے ہیں کہ اللہ اور اس کے فرشتے نبی صلی اللہ علیہ وسلم پر رحمت بھیجتے ہیں، ایمان والو، تم بھی ان پر بہت زیادہ رحمت اور سلام بھیجو۔ میرا سوال یہ ہے کہ رسول اللہ پر درود تو ہم درود ابراہیمی کے ذریعے سے بھیجتے ہیں، لیکن سلام کے الفاظ کیا ہونے چاہییں؟

پڑھیے۔۔۔

بچوں كو مسنون دعائيں سكھانا

ہمارے ہاں بچوں کو نبی کریم صلی اللہ علیہ وسلم کی مسنون دعائیں عربی زبان میں سکھائی جاتی ہیں۔ نبی کریم نے مختلف موقعوں پر جو دعائیں کی ہیں ، کیا وہ صرف ان خاص موقعوں کے لیے تھیں یا اب بھی خیر و برکت کے پہلو سے دہرائی جا سکتی ہیں اور کیا اس پہلو سے اپنے بچوں کو لازماً یاد کرائی جانی چاہییں؟

پڑھیے۔۔۔

اذان کے بعد کی دعا پڑھنے کے لیے ہاتھ اٹھانا

اذان کے بعد جو دعا پڑھی جاتی ہے، کیا اس میں ہاتھ اٹھانے ضروری ہیں؟ اور کیا یہ دعا جمعہ کی دوسری اذان کے بعد بھی پڑھنی چاہیے؟

پڑھیے۔۔۔

استخارے کا جواب اور دعاے استخارہ کی حقیقت

استخارہ کرنے کی صورت میں جو جواب آئے، اس کی مخالفت کرنا درست ہے یا نہیں؟

پڑھیے۔۔۔

تقدیر اور دعا

کیا ہم اپنی تقدیر دعا سے بدل سکتے ہیں۔ یا جو اللہ نے ہمارے مقدر میں لکھ دیا ہے وہی ہوگا۔اگر معاملہ یہ ہے تو پھر ہم دعا کیوں کرتے ہیں۔

 اللہ نے بہت سے فیصلے انسان پر چھوڑ دیے ہیں۔انسان جو فیصلہ کرتا ہے کیا ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ وہی خدا کو منظور تھا۔ایک مثال کے مطابق :اگر کوئی اپنی پسند کی شادی کرنا چاہتا ہےاور لڑکی کے گھر والے سب جانتے ہوئے بھی اس کی شادی کہیں اور کر دیں تو کیا یہ کہنا درست ہوگا کہ اللہ کی جو مرضی تھی یا جو مقدر تھا وہی ہوا۔کون ذمہ دار ہے۔ لیکن میرا خیال یہ ہے کہ یہ اللہ کا فیصلہ نہیں تھا۔ یہ تو اس کے گھر والوں نے جان بوجھ کر کیا کیونکہ اللہ نے ہمیں یہ حق دیا کہ ہم اپنی پسند کی شادی کریں۔ تو اس صورت حال میں ہمیں کیا کہنا چاہیے۔ جو خدا کی رضا، یا اس کے گھر والوں کو الزام دینا چاہیے۔

پڑھیے۔۔۔

مشکل ختم کرنے کے لیے تسبیحات

ہر قسم کی مشکل ختم کرنے کے لیے کچھ پڑھنے کا بتائیے۔ استغفراللہ کی تسبیح دن اور رات میں کئی بار پڑھتا ہوں۔ تسبیح کی نماز کا بتائیے کہ اس کو پڑھنے سے بھی پریشانیاں ختم ہوتی ہیں؟

میرا مسئلہ رزق میں تنگی کا ہے رزق میں فراخی اور خوشحالی کے لیے گائیڈ کر دیں۔

پڑھیے۔۔۔

فطرت کی طرف سے امتیازی سلوک

کسی شخص کا اپنی پیدائیش پر اختیار نھیں ھوتا،پھر کوئی کسی ارب پتی کے ھاں پیدا ھوتا ھے اور کوئی کسی فقیر کے ھاں، یہ فطرت کی طرف سے امتیازی سلوک نھیں ھے کہ کوئی منہ میں سونے کا چمچہ لے کر پیدا ھوا اور کوئی فاقوں کے جھرمٹ میں.

اگر آپ کچھ وضاحت کر دیں تو مشکور ھوں گا کہ کسی عقلی منطق کی تلاش میں ھوں اور آپ کو ھمیشہ فکری استاد سمجھا ھے.

پڑھیے۔۔۔

ایصال ثواب اور دعا

آپ نے ایصال ثواب کے انکار پر جو بنیادی مقدمہ قائم کیا ہے وہ یہ ہے کہ کسی آدمی کا عمل دوسرے کے کام نہیں آ سکتا۔ جبکہ آپ خود دعا کرنے کو جائز سمجھتے ہیں۔ دعا کسی کے لیے کیسے نفع بخش ہو سکتی ہے۔

پڑھیے۔۔۔

اویس قرنی

میرا سوال نیچے دی گئی حدیث اور اویس قرنی سے متعلق ہے۔ برائے مہربانی اس کی وضاحت کر دیجیے۔

صحيح مسلم - كتاب فضائل الصحابة - إن رجلا يأتيكم من اليمن يقال له أويس

4613 - ص 1969 - 2542 حدثنا إسحق بن إبراهيم الحنظلي ومحمد بن المثنى ومحمد بن بشار قال إسحق أخبرنا وقال الآخران حدثنا واللفظ لابن المثنى حدثنا معاذ بن هشام حدثني أبي عن قتادة عن زرارة بن أوفى عن أسير بن جابر قال كان عمر بن الخطاب إذا أتى عليه أمداد أهل اليمن سألهم أفيكم أويس بن عامر حتى أتى على أويس فقال أنت أويس بن عامر قال نعم قال من مراد ثم من قرن قال نعم قال فكان بك برص فبرأت منه إلا موضع درهم قال نعم قال لك والدة قال نعم قال سمعت رسول الله صلى الله عليه وسلم يقول يأتي عليكم أويس بن عامر مع أمداد أهل اليمن من مراد ثم من قرن كان به برص فبرأ منه إلا موضع درهم له والدة هو بها بر لو أقسم على الله لأبره فإن استطعت أن يستغفر لك فافعل فاستغفر لي فاستغفر له فقال له عمر أين تريد قال الكوفة قال ألا أكتب لك إلى عاملها قال أكون في غبراء الناس أحب إلي قال فلما كان من العام المقبل حج رجل من أشرافهم فوافق عمر فسأله عن أويس قال تركته رث البيت قليل المتاع قال سمعت رسول الله صلى الله عليه وسلم يقول يأتي عليكم أويس بن عامر مع أمداد أهل اليمن من مراد ثم من قرن كان به برص فبرأ منه إلا موضع درهم له والدة هو بها بر لو أقسم على الله لأبره فإن استطعت أن يستغفر لك فافعل فأتى أويسا فقال استغفر لي قال أنت أحدث عهدا بسفر صالح فاستغفر لي قال استغفر لي قال أنت أحدث عهدا بسفر صالح فاستغفر لي قال لقيت عمر قال نعم فاستغفر له ففطن له الناس فانطلق على وجهه قال أسير وكسوته بردة فكان كلما رآه إنسان قال من أين لأويس هذه البردة

پڑھیے۔۔۔

ازدواجی زندگی

میرا سوال یہ ہے کہ میرے ایک دوست کی ایک سال پہلے شادی ہوئی لیکن بعد قسمتی سے میاں اور بیوی میں ابھی تک انڈرسٹنڈنگ نہیں ہو سکی ہے، میرے دوست نے مجھ سےکہا کہ میں کسی عالم سےکوئی دعایا کوئی قرانی سورت وغیرہ پوچھ کر بتاؤں جس کے نتیجے میں ان کی ازدواجی زندگی ٹھیک ہو جاۓ۔

پڑھیے۔۔۔

قرآنی آیات کے ذریعے بیماریوں

میں آٹھ سال کمر کی شدید تکلیف میں مبتلا رہا۔ اس سلسلے میں میں ایک بابا جی کے پاس گیا، انہوں نے مجھے قرآنی آیات پر مشتمل کچھ تعویذ دیے۔ کم و بیش دو ہفتوں میں میں کافی بہتر محسوس کرنے لگا۔ اب میں باقاعدہ ان کے پاس مختلف امراض کے سلسلے میں جاتا ہوں۔ دوسرے لوگ بھی اس کے مفید علاج سے مطمئن ہیں۔ وہ بابا جی کچھ آیات تلاوت کر کے دم کرتے ہیں اور تعویذ بھی دیتے ہیں جو کہ پانی میں ڈال کر کھائے جاتے ہیں۔ وہ بابا جی ایک تعویذ کے تقریباً ٥٠٠ روپے لیتے ہیں۔ ان کا کہنا ہے کہ یہ رقم میں خیرات میں دیتا ہوں۔ وہ اکثرا یسی بیماریوں کے بارے میں بتاتے ہیں جو کہ جادو اور تعویذ کی وجہ سے لاحق ہوتی ہیں۔ انہیں یقین ہے کہ لوگوں کا علاج کرنے کا انہیں خدا کی طرف سے مخصوص طریقہ سکھایا گیا ہے اور ان کے ہاتھ میں خدا نے شفا رکھی ہے۔ اس سلسلے میں میں آپ سے چند سوالات کے بارے میں رہنمائی چاہتا ہوں۔

١۔ کیا کسی ایسے طبیب کے پاس اپنا مرض لے کر جانا چاہیے جو کہ قرآنی آیات کے ذریعے علاج کرتا ہو؟کیا اسے اس بات کی اجازت ہے۔؟

٢۔ کیا قرآنی آیات میں کوئی خاص ربط ہے جس کے ذریعے بیماریوں کا علاج کیا جا سکے؟ کیا اسم اعظم اور ناد علی میں کوئی خاص طاقت پوشیدہ ہے۔؟

٣۔ کیا ایسے حضرات دنیا میں موجود ہیں جو کہ خدا کی طرف سے اتنا بلند مرتبہ رکھتے ہیں کہ ان کے ہاتھوں میں شفا پائی جائے؟

٤۔ سلسلہ کیا ہوتا ہےـ؟ کچھ لوگ اپنے مخصوص پیر منتخب کر لیتے ہیں، کیا یہ اسلامی نظام ہے؟ ٥۔ کیا کوئی صوفی وفات کے بعد خواب میں آ کر انسان کی تربیت کر سکتے ہیں؟ کیا مردہ صوفیا کی ارواح انسانوں پر اثر انداز ہوتی ہیں؟

پڑھیے۔۔۔

لڑکیوں کے رشتے کے لیے وظیفہ

میرے پاس دو سوال ہیں جن کے بارے میں آپ کی رہنمائی چاہیے۔ ۱۔ لڑکیوں کے رشتے سلسلے میں کوئی وظیفہ ہو تو وہ عنایت کر دیں۔ ۲۔ میرا دوسرا سوال یہ ہے کہ کسی پلاسٹک کے تھیلے پر اگر لفظ "المدینہ" لکھا ہو تو اس کو کس طرح لیا جائے کیوں کہ بہت سی سپر مارکیٹوں، دکانوں اور بیکریز کا نام المدینہ ہوتا ہے اور وہ ہزاروں شاپنگ بیگ رکھتے ہیں اشیاء ڈالنے کے لیے۔ اور انہیں کوڑا ڈالنے کے لیے بھی استعمال کیا جاتا ہے۔ اس طرح لفظ المدینہ کی بے حرمتی کا اندیشہ ہے۔ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیے کہ اس بے حرمتی سے بچنے کے لیے ہمیں ان بیگز کو کس طرح ضائع کر دینا چاہیے؟

پڑھیے۔۔۔

محتاجی سے بچنے کی دعا

میں نے ماہنامہ ''اشراق'' کے کسی شمارے میں پڑھا ہے: ''اللہ تعالیٰ نے یہ نظام اس طرح قائم کیا ہے کہ یہاں سب لوگ ایک دوسرے کے محتاج اور محتاج الیہ کی حیثیت سے پیدا ہوئے ہیں۔'' میں ہی نہیں سب لوگ یہ دعا کرتے ہیں کہ اللہ کسی کا محتاج نہ کرے ۔ سوال یہ ہے کہ کیا ہم غلط دعا کرتے ہیں؟

پڑھیے۔۔۔

سیدنا نوح علیہ السلام كی كافر بیٹے كے لیے دعا

آپ نے یہ سوال كیا ہے كہ حكم امتناعی كے باوجود نوح علیہ السلام بیٹے كی نجات كی دعا كیوں كی اور كشتی میں سوار ہونے كی دعوت كیوں دی؟

پڑھیے۔۔۔

نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے وسیلے سے خدا سے مانگنا

میرا سوال یہ ہے کہ کیا ہم اللہ سے رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کا وسیلہ دے کر کچھ مانگ سکتے ہیں؟ جیسے کہ ہم کہیں کہ اے اللہ مجھے محمدؐ کے وسیلہ سے فلاں چیز عطا فرما۔ کیا ایسا کہنا جائز ہے؟ اور مزید یہ کہ کیا ہم اپنی دیواروں پر جو اللہ اور رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے ناموں سے مزین جو اشتہار لگاتے ہیں وہ بدعت کے زمرے میں آتا ہے؟ برائے مہربانی وضاحت فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔

قنوت نازلہ

قنوت نازلہ سے کیا مراد ہے؟ برایئے مہربانی وضاحت کیجیے۔

پڑھیے۔۔۔