دعوت و تبلیغ کی حقدار

بعض لوگ اپنا گھر اور اپنا ملک چھوڑ کر باہر تبلیغ کے لیے چلے جاتے ہیں۔ حالانکہ ہمارے ملک میں بھی حالات اتنے بہتر نہیں ہیں تو کیا یہ کرنا ٹھیک ہے؟

پڑھیے۔۔۔

دعوت میں حکمت

میری بیوی کے ناخن بہت لمبے ہیں۔ میں نے کئی مرتبہ ان سے کہا کہ ان کو کاٹ دو، لیکن وہ کہتی ہے کہ تم مجھے چھوڑ دو، لیکن میں ناخن ہر گز نہیں کاٹوں گی؟

پڑھیے۔۔۔

صلیبی جنگ اور دعوت و تبليغ

کیا صلیبی جنگوں نے اسلام کی دعوت کو نقصان پہنچایا؟اور اگر نقصان پہنچایا ہے تو یہ بات کس حد تک درست ہے؟ برائے مہربانی رہنمائی فرمائیے۔

پڑھیے۔۔۔

دورِ جدید اور دعوت

میرا نقطۂ نظر یہ ہے کہ موجودہ زمانے میں مسلمان امت کی تعلیم اور سوشل سروس جو معاشرے کے محروم طبقات میں بہترین سازوسامان کے ساتھ کی جارہی ہے، ہی صحیح دعوت ہے، لیکن میرے بعض دوست کہتے ہیں کہ اسلام کے عقائد واعمال کی دعوت ہی صحیح دعوت ہے۔ ازراہ کرم رہنمائی فرمائیے۔

پڑھیے۔۔۔

معاصر علما کی آراء

ایک طویل عرصہ سے میں بریلوی، دیوبندی اور اہل حدیث فرقہ کے علما کا مطالعہ کرتا رہا ہوں مگر ان میں سے کوئی بھی مجھے مطمئن نہیں کر سکا۔ حق کی تلاش میں میں مولانا وحید الدین خان اور جاوید احمد غامدی تک پہنچا۔ میں ان دونوں حضرات کے کے نقطہ نظر کو سمجھنے کی کوشش میں ہوں۔میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ ان دونوں حضرات کے نقطہ ہائے نظر میں بنیادی فرق کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

تبلیغی جماعت

میں انڈیا سے تعلق رکھتا ہوں اور تبلیغی جماعت سے متعلق ہوں۔ تبلیغی جماعت جیسا کہ آپ جانتے ہیں پوری دنیا میں دین پھیلانے کا کام کرتی ہے۔ کچھ لوگ تبلیغی جماعت کے مشن اور طریق کار پر اعتراض کرتے ہیں۔ میرا خیال یہ ہے کہ اگر تمام لوگ دین کی دعوت کا راستہ چھوڑ دیں تو اسلام کی طرف ہماری رہنمائی کرنے والا کوئی نہیں رہے گا۔ فرض کریں کہ یہ تبلیغ غلط ہے اور آج تمام لوگ تبلیغ کے لیے ٹی وی چینلز کھول کر بیٹھ جائیں۔ یہ تو ہم جانتے ہیں کہ ان ٹی وی پروگرامز کے دوران بہت سے ایسے اشتہار چلائے جاتے ہیں جن میں عورتوں کی بے ہودگی دکھائی جاتی ہے۔ اب جو لوگ پروگرام دیکھ رہے ہیں وہ اشتہار بھی ضرور دیکھیں گے۔ اور ایسی چیزیں دیکھنے سے ان لوگوں کے اندر غلط خیالات پیدا ہوتے ہیں جن کی وجہ سے وہ تنہائی میں کوئی غلط حرکت کرنے کے بارے میں بھی سوچ سکتے ہیں۔ تو جو لوگ تبلیغی جماعت والوں کے خلاف بولتے ہیں وہ پانچ فیصد دین بھی نہیں سیکھ پاتے۔

جو لوگ تبلیغی جماعت کے ساتھ جاتے ہیں وہ عبادات سیکھ لیتے ہیں، وہ اللہ اور اس کے پیغمبر سے عقیدت پیدا کر لیتے ہیں اور قرآن کی کچھ آیات یاد کر لیتے ہیں۔ اگر یہ ٹھیک ہے تو پھر لوگ کس بنا پر کہتے ہیں کہ تبلیغ غلط ہے۔ تبلیغی جماعت والے دوسروں کی طرح انسان ہی ہوتے ہیں ۔ وہ اللہ کے راستے میں نکلتے ہیں تو دین پھیلانے کے لیے، نہ کہ سیر کرنے کے لیے۔ اس لیے وہ جہاں بھی جائیں وہاں کی مسجد میں قیام کرتے ہیں نہ کہ کسی ہوٹل کے کمرے میں۔ برائے مہربانی مجھے بتائیے کہ کیا تبلیغ صحیح ہے یا غلط؟ اگر غلط ہے تو کس بنا پر؟

پڑھیے۔۔۔