تعویذ سے بیماری کا علاج

کیا تعویذ کے ذریعے سے بیماری کا علاج کیا جا سکتا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

آیات قرآنی کا استعمال براے دم ، تعویذ یا وظیفہ

کیا ہم آیات قرآن پڑھ کر اپنے اوپر دم کر سکتے ہیں؟ کیا آیات قرآنی کو تعویذ بنا کر گلے میں ڈالا جا سکتا ہے؟ کیا کاروبار کی ترقی کے لیے سورۂ مزمل کا ختم کرایا جا سکتا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

گھر میں اذان دینا اور تعویز پہننا

ہم نے جون میں نیا گھر لیا۔ ستمبر میں میری شادی ہوئی۔ دس دن بعد میری والدہ کی وفات ہوگئی۔ نومبر میں میری جوان بہن کی وفات ہو گئی۔ مولوی صاحب سے رابطہ کیا تو انھوں نے کچھ تعویز دیے اور کہا کہ گھر میں تین ٹائم اذان دیا کرو، مصیبت چلی جائے گی۔ کیا گھر میں اذان دینا اور تعویز پہننا صحیح ہے۔

پڑھیے۔۔۔

حج میں قربانی کی نوعیت

ہم حج کے لیے نکلتے ہیں۔ حج کے یہ ارکان ہیں: ۱۔ احرام باندھنا۔ ۲۔ منیٰ میں جانا اور قیام کرنا۔ ۳۔ عرفات کی طرف جا کر وقوف کرنا۔ ۴۔ مذدلفہ میں رات کا قیام۔ ۵۔ واپس منیٰ میں آنا اور رمی جمرات میں حصہ لینا۔ ۶۔ قربانی۔ ۷۔ بال کٹوانا اور احرام کھولنے کے بعد کپڑے بدلنا۔ میرے ایک دوست نے مجھے بتایا کہ قربانی حضرت ابراہیم علیہ السلام کی یاد میں نہیں کی جاتی بلکہ یہ عمرہ کے کے بعد احرام اتارنے کا ایک دم ہے۔ اگر عمرہ کے بعد آپ حج تک احرام باندھے رکھتے ہیں تو قربانی نہیں ہو گی۔ برائے مہربانی وضاحت فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔

قرآن كی آيات كا دم كرنا

ميں نے ذندگی ميں اكثر ديكھا ہے كہ لوگ بيمار ہوتے ہيں تو ان پر قرآن كی آيات پڑھ كر دم كيا جاتا ہے۔ جو لوگ يہ كرتے ہيں وه ساتھ ميں يہ كہتے ہيں كہ قرآن مجيد ميں ہر بيماری كا علاج ہے۔ آپ كی اس بارے ميں كيا رائے ہے؟ كيا ايسا كرنا ٹھيك ہے؟ دم كے حوالے سے ايك صحيح حديث ہے جس كا مفہوم يہ ہے كہ نبی صلی الله عليہ و سلم چار قل پڑھ كے اپنے اوپر دم كيا كرتے تھے۔ براہ كرم وضاحت فرمائيں۔

پڑھیے۔۔۔

روز مرہ کی بیماریوں کے علاج کے لیے قرآنی آیات کا استعمال

کیا روز مرہ کی بیماریوں کے علاج کے لیے قرآنی آیات کا استعمال درست ہے؟

پڑھیے۔۔۔

وظیفے اور تعویذ

قرآن مجید کی آیت ہے کہ جب تم پر کوئی پریشانی یا مصیبت آئے تو نماز اور صبر سے کام لو۔ اس کے بجاے ہم پریشانی یا مصیبت سے حفاظت کے لیے تعویذوں یا وظیفوں کا سہارا لیتے ہیں۔ کیا یہ درست ہے؟

پڑھیے۔۔۔

تعویذ

ہمارے معاشرے میں تعویذ کا رواج عام ہو چکا ہے۔ کیا یہ کوئی دینی نوعیت کی چیز ہے یا کسی چیز کا علامتی اظہار ہے؟ کیا اس کے پہننے سے بیماریاں دور ہو سکتیں اور بگڑے ہوئے کام درست ہو سکتے ہیں؟

پڑھیے۔۔۔

فلاح انسانی کے لیے وظائف

روحانیت اور تصوف کی دنیا میں بالخصوص اور روایتی مذہبی طبقہ میں بالعموم بہت سے وظائف رائج ہیں۔یہ طے ہے کہ یہ دین کا حصہ نہیں ہیں۔ میرا تجربہ ہے کہ ان میں اللہ تعالیٰ کے اسماے گرامی اور آیات قرآنی ہی استعمال کیے جاتے ہیں۔ مختلف مسائل کے لیے مخصوص طریق کار اور تعداد میں پڑھنے سے فوائد بھی حاصل ہوتے ہیں۔فلاح انسانی سے یقینا اللہ تعالیٰ خوش ہوتے ہیں۔ اگر فلاح انسانی کے لیے وظائف ، درود شریف اور قرآنی آیات سے یہ فائدہ اٹھایا جائے تو اس میں کیا حرج ہے؟

پڑھیے۔۔۔