سورہ نساء (٤) کی آیت ٦٩ کا مفہوم

سورہ نساء کی آیت ٦٩ کا کیا مطلب ہے؟

پڑھیے۔۔۔

فانکحوا ما طاب لکم من النساء(نساء4: 3) میں “النساء” سے مراد

میرا سوال سورۂ نساء کی آیت نمبر 3 کے اُس ترجمے سے متعلق ہے ، جو محترم جاوید احمد غامدی صاحب نے اپنی کتاب ’قانونِ معاشرت‘ میں کیا ہے۔ جاوید صاحب نے یہ ترجمہ کیا ہے کہ ۔’’یتیموں کی ماؤں سے نکاح کر لو‘‘ میں نے تین چار دوسرے مترجمین کا ترجمہ دیکھا تو اُن سب نے تقریباً یہ ترجمہ کیا ہے کہ ’’جو عورتیں تمہیں پسند آئیں ، اُن سے نکاح کر لو‘‘۔ جاوید صاحب نے عورتوں کے لفظ کو چھوڑ کر جو یتیموں کی ماؤں کو جو لفظ استعمال کیا ہے اُس نے مجھے کافی Confused کر دیا ہے۔ لہٰذا آپ براہِ مہربانی ا س کی وضاحت کر دیں تاکہ میں آئندہ بھی غامدی صاحب کی تحریروں کو بغیر کسی شک و شبہ کے دیکھتا رہوں ؟

پڑھیے۔۔۔