قطع تعلق اور صلہ رحمی

میرا سوال قطع تعلق یا صلہ رحمی سے متعلق ہے۔ اگر خاندان میں کوئی زیادتی کرتا ہے یا کر رہا ہے اور کسی کے سمجھانے سے بھی نہیں سمجھتا بلکہ حد سے گزر جاتا ہے تو کیا معاملہ کرنا چاہیے؟ترک تعلق کس حد تک یا کب جائز ہو جاتا ہے؟ اگر میری بہن یا بھائی کے ساتھ خاندان کا کوئی فرد ظلم وزیادتی کرتا ہے تو کیا مجھے اپنی بہن یا بھائی کی خاطر اس خاندان سے ترک تعلق نہیں کرنا چاہیے۔ ان کی خوشی یا غم میں شرکت کرنا پھر بھی میرا فرض ہوگا۔

پڑھیے۔۔۔