مشروط طلاق

میاں بیوی کی تکرار کے دوران میں میاں نے بیوی کو مشروط طلاق دیتے ہوئے کہا کہ اگر تو گھر سے باہر گئی تو تجھے طلاق ہے۔ بیوی جذباتی کیفیت میں گھر سے چلی گئی۔اس صورت حال میں شریعت کا حکم کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

علیحدگی کی صورت میں بچے کی کفالت

میری اہلیہ میری طرف سے ملازمت کی اجازت نہ ملنے کی وجہ سے مجھے چھوڑ کر اپنے والدین کے پاس چلی گئی ہے۔ وہ اپنے ساتھ میری انتہائی بیمار بچی کو بھی لے گئی ہے، حالانکہ میرے سسرال میں نہ صحیح طرح سے اس بچی کا علاج ممکن ہے اور نہ وہ لوگ اس کے علاج کا خرچ برداشت ہی کر سکتے ہیں۔ اب وہ مجھے اپنی بچی سے ملنے بھی نہیں دے رہے، بلکہ مزید یہ کہ میری اہلیہ نے عدالت سے یہ درخواست کی ہے کہ بچی کو اسی کے پاس رہنے دیا جائے۔ جبکہ میں یہ چاہتا ہوں کہ اگر میری بیوی میرے پاس نہیں بھی آنا چاہتی تو میری بیٹی میرے پاس ہی رہے تاکہ میں اس کا صحیح علاج کرا سکوں۔ چنانچہ میں آپ سے درج ذیل سوالات پوچھنا چاہتا ہوں:

١۔ کیا میں اپنی انتہائی بیمار بچی کو جس کی جان خطرے میں ہے ، حاصل کرنے کا مطالبہ شرعاً کر سکتا ہوں؟

٢۔ کیا شریعت ان حالات میں جبکہ بچی کی ماں محض ملازمت کی خواہش کے لیے اپنے خاوند کی اجازت کے بغیر اپنے گھر کو چھوڑ کر چلی گئی ہے، بچی کے باپ کو کچھ ایسے خاص حقوق دیتی ہے جن کی بنا پر وہ اس صورت حال کو سنبھال سکے؟

٣۔ بچی کس کے پاس رہے گی، اس کیس کا فیصلہ شرعی قانون کے تحت کیا جائے گا یا دیوانی قانون کے تحت؟

٤۔ اس سارے قضیے میں آپ کی اپنی کیا راے ہے؟

پڑھیے۔۔۔

وقوع طلاق کے بارے میں اختلاف

میں نے اپنی بیوی کو غصے میں دی ہوئی تین طلاقوں کے بارے میں علما سے فتویٰ طلب کیا تھا۔ انھوں نے مجھے یہ فتویٰ دیا کہ آپ اپنی بیوی کو تینوں طلاقیں دے چکے ہیں، لہٰذا اب کچھ بھی نہیں ہو سکتا سوائے اس کے کہ حلالہ شرعی کو اختیار کیا جائے۔

پڑھیے۔۔۔

طلاق کی نیت کے بغیر طلاق کے الفاظ بولنا

میں نے اپنی بیوی کے ساتھ جھگڑے کے دو مختلف موقعوں میں سے ہر موقع پر محض اسے دبانے اور چپ کرانے کے لیے دو بار طلاق طلاق کے الفاظ بولے ہیں، جس کے نتیجے میں اس وقت وہ جھگڑا ختم ہو گیا۔ میرا سوال یہ ہے کہ کیا اس صورت میں جبکہ میں نے طلاق دینے کی نیت سے طلاق کے الفاظ بولے ہی نہیں تھے تو کیا میرے ان الفاظ سے طلاق واقع ہو گئی تھی؟

پڑھیے۔۔۔

بہتان اور طلاق

اگر کوئی شخص اپنی بیوی پر شک کرتے ہوئے یہ الزام لگائے کہ وہ اس کے بعض رشتہ داروں پر جادو کر رہی ہے یا کرا رہی ہے، پھر وہ خاتون قرآن پر ہاتھ رکھ کر اپنی معصومیت کی قسم کھا لے کہ اس نے اس طرح کا کوئی جادو وغیرہ نہیں کیا تو کیا مذکورہ خاوند اپنی بیوی پر جادو کا یہ بہتان لگانے کے بعد اس کے ساتھ رہ سکتا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

ڈپريشن ميں طلاق دينا

ميرے شوہر ڈپريشن کے مريض ہيں۔ انھوں نے مجھ سے جھگڑتے ہوئے ميرے مطالبے پر تين بار طلاق کے الفاظ ادا کر ديے۔ اس کے بعد انھوں نے رجوع کر ليا اور مجھے يہ بتايا کہ انہوں نے طلاق کے الفاظ ارادۃً ادا ہي نہيں کيے تھے، بلکہ صرف مجھے ڈرانے کے ليے يہ الفاظ بولے تھے اور ان کے علم کے مطابق قرآن مجيد کے نزديک اس طرح سے طلاق واقع نہيں ہوتي۔ پھر جب بعض علما سے رجوع کيا گيا تو انھوں نے يہ فتوي ديا ہے کہ اس صورت ميں ايک طلاق واقع ہو چکي ہے۔ طلاق کے اس واقعے کو گزرے چار سال ہو چکے ہيں۔ ميں اس کے بارے ميں غامدي صاحب کي رائے جاننا چاہتي ہوں۔

پڑھیے۔۔۔

اولاد سے متعلق ایک سوال

میری بیوی نے مجھ سے علیحدگی کر لی ہے۔ بچے اس کے پاس ہیں میں اپنے بچے لینا چاہتا ہوں۔ میرے دو بیٹے ہیں ایک کی عمر نو سال اور دوسرے کی چھ سال ہے۔ کیا شریعت کی رو سے میں بچے لے سکتا ہوں۔

پڑھیے۔۔۔

شادی اور کفاءت

میں نے ڈاکٹریٹ کیا ہوا ہے اور میں گورنمنٹ کالج میں لیکچرر ہوں۔ میں پچاس ہزار روپے کماتی ہوں۔ میرے ساتھ ایک ناگوار واقعہ یہ ہوا ہے کہ میں طلاق یافتہ ہوں۔ وجہ یہ ہوئی کہ میرے شوہر کو بیوی کی ضرورت ہی نہیں تھی۔ گھر والوں نے زبردستی شادی کی۔ وہ لوگ کافی امیر تھے۔ کئی سال ہو گئے ہیں۔

اب میرا ایک رشتہ ہے۔ لڑکے نے صرف انٹر کیا ہے۔ سپلائی لائن۔ آمدنی بیس ہزار۔ سب کہتے ہیں کہ اس سے نہیں کرو شادی۔ گھر بھی رینٹ پہ ہے۔ کیا انسان مفلسی دیکھ کر شادی نہ کرے جبکہ وہ ایزی سٹیٹس پہ ہو۔

پڑھیے۔۔۔

تین بار طلاق

میں نے 30 مئی کو آٹھ گواہوں کے سامنے غصے کی حالت میں تین بار طلاق دے دی۔ میری بیوی اور اس کے گھر والے اب طلاق کو نہیں مانتے۔ 30 مئی سے وہ اب تک میرے گھررہ رہی ہے۔ اس کے گھر والے اس کو نہیں لے جارہے ہیں۔ ہمارا ایک سال کا بچا بھی ہے۔ اور وہ دو ماہ کی حاملہ بھی ہے۔ میری رہنمائی فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔

تفویضِ طلاق

نکاح نامے میں تفویض طلاق کی شق ہے، اس شق کی شرعی حیثیت کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

غیر مدخولہ بیوہ کی عدت

کیا اس خاتون کے لیے بھی عدت ہے جس کا خاوند رخصتی سے پہلے فوت ہو جائے؟

پڑھیے۔۔۔

ایک ہی موقع پر تین طلاقیں دینا

مجھے طلاق کے بارے میں آپ لوگوں کی راے معلوم ہوئی۔ مجھے آپ لوگوں کی بات صحیح لگتی ہے، لیکن ہمارے ملک میں اس طرح کی باتیں کرنے والے کو لوگ کافر قرار دے دیتے ہیں۔ جو شخص ایک ہی موقع پر تین طلاقیں دے دے ، اس کے بارے میں آپ کی راے کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

طلاق اور جہیز کی واپسی

ایک بیوی اپنی مرضی سے یہ ارادہ کر کے کہ وہ کبھی واپس نہیں آئے گی ، شوہر کا گھر چھوڑ کر چلی جاتی ہے ، لیکن وہ یہ بات اپنے شوہر کو نہیں بتاتی۔ شوہر کا گھر چھوڑنے سے ایک سال پہلے سے ان کے درمیان کوئی ازدواجی تعلق نہیں تھا ، شوہر کا گھر چھوڑنے کے بعد وہ شوہر پر کیس جیتنے کے لیے بے بنیاد الزام لگاتی ہے۔ کچھ ہی ہفتوں میں شوہر کو معلوم ہو جاتا ہے کہ وہ اصل میں کسی دوسرے آدمی میں دل چسپی رکھتی تھی۔ یہ معاملہ شادی سے پہلے سے چل رہا تھا۔ وہ بیوی کو طلاق دے دیتا ہے۔ شوہر بیوی سے کہتا ہے کہ وہ زیورات کے علاوہ جہیز کا سارا سامان لے جا سکتی ہے۔ زیورات نہ دینے کی وجہ یہ ہے کہ اس نے نہ گھر میں رہتے ہوئے اور نہ گھر سے جانے کے بعد بیوی والا رویہ اختیار کیا۔اس صورت حال میں کیا شوہر بیوی کو زیورات نہ دینے کا حق رکھتا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

ستر سالہ عورت کی عدت

ایک عورت جو ستر سال کی عمر میں بیوہ ہوئی ہے ، کیا اسے بھی قرآن کے حکم کے مطابق چار ماہ دس دن عدت گزارنا ہوگی؟

پڑھیے۔۔۔

طلاق کی عدت کا آغاز

میری شادی کو چھ سال ہوئے ہیں۔ اس دوران کئی بار جھگڑے ہوئے ہیں اور میری بیوی بار بار روٹھ کر میکے جاتی رہتی ہے۔ اب بھی آٹھ ماہ سے وہ میکے میں ہے۔ اس سے پہلے بھی میں نے ایک رجعی طلاق دی تھی جس کے بعد رجوع بھی کر لیا تھا۔ اب بھی منانے کی کئی کوششیں ہوئی ہیں ، لیکن ان کی طرف سے طلاق کے بار بار اصرار پر میں نے ایک طلاق کا نوٹس بھیجا تھا۔ جس میں دس دن کے بعد دوسری طلاق واقع ہو جاتی اور تیس دن گزرنے پر تیسری طلاق واقع ہو جاتی۔ تیس دن گزرنے سے پہلے میں نے تیسری طلاق واقع ہونے کی شق ختم کردی۔ آپ یہ بتائیے کہ دوسری طلاق کب واقع ہوئی اور اس کی عدت کیا ہے؟ یہ بھی بتائیے کہ کیا اس عدت میں رجوع ہو سکتا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

ایک وقت میں تین طلاقوں کے متعلق مرفوع صحیح احادیث

ایک وقت میں تین طلاقوں کے متعلق مرفوع صحیح احادیث بیان کریں۔

پڑھیے۔۔۔

اہل تشیع سے شادی اور طلاق

میں بہت مشکل میں ہوں۔ میں اہل سنت میں سے ہوں اور میں نے اپنی مرضی سے شادی ایک اہل تشیع سے کی تھی۔ شادی کو سات سال ہو چکے ہیں۔ میرے شوہر نے ایک جھگڑے کے باعث مجھے اہل سنت کے طریقے پر کورٹ سے طلاق دے دی۔ میں نے اپنے مسلک کے مطابق یہ طلاق قبول بھی کر لی۔

بہت سے مفتی کہتے ہیں کہ شیعہ سنی شادی جائز ہی نہیں ہے۔ میری ایک بیٹی بھی ہے کیا وہ ناجائز ہے۔

میرے شوہر مجھے کہتے ہیں کہ میں نے طلاق نہیں دی کیونکہ میرے مسلک کے مطابق ایسے طلاق نہیں ہوتی۔ وہ رجوع کرنا چاہتے ہیں۔ اہل تشیع ائمہ کہتے ہیں کہ طلاق نہیں ہوئی۔

میرا مسئلہ حل کیجیے اگر میں اپنے شوہر کے پاس واپس جانا چاہوں تو مجھے کیا کرنا ہو گا؟ حلالہ کرنا چاہوں تو مجھے کیا کرنا ہوگا؟ میں نے یہ بھی پڑھا ہے کہ حلالہ جائز نہیں ہے۔

شیعہ کیوں مسلمان نہیں ہیں؟

پڑھیے۔۔۔

طلاق سے رجوع اور شادی

اگر ایک مرد اور عورت نے شادی کی اور بعد میں طلاق بھی ہو گئی۔ کچھ عرصہ گزرنے کے بعد اب وہ دونوں دوبارہ شادی کرنا چاہتے ہیں۔ اس شادی کا کیا طریقہ ہو گا؟

پڑھیے۔۔۔

نكاح اور مہر

ايك آدمی نے نكاح كرتےوقت مہر ادا نہ كرنے يا كم مہر دينے كی نيت دل ميں ركھی۔ اس نے ايك بڑی رقم بظاہر طے تو كرلی مگر صرف اس لئے كہ لڑكی مان جائے۔ اس شخص كا دعوی ہے كہ لڑكی ضد كر رہی تھی اور اس نے صرف نكاح كرنے كی غرض سے مطلوبہ رقم لكھ دی۔ ميرا سوال يہ ہے كيا يہ نكاح ہو گيا اگر وہ اب مہر ادا بھی كر دے؟ ميرا خيال يہ ہے كہ يہ نكاح نہيں ہوتا۔

پڑھیے۔۔۔

طلاق اور رجوع

اگر کوئی شخص اپنی بیوی سے یہ کہے کہ تم نے ایسا کیا تو ایک طلاق پڑ جائے گی اور اس کی بیوی وہ کام کر لے مگر وہ قرآن کے طریقہ كے مطابق نہ تو لوگوں (بزرگوں )کو گواہ بنائے نہ بیوی کو اس کے گھر بھجوائے اور چند گھنٹوں اور چند دنوں کے اندر رجوع کر لے تو کیا طلاق واقع ہوئی؟ یا عدت سے پہلے رجوع کرنے سے جو تین (٣) مواقع اس کے پاس تھے وہ واپس آ گئے یا نہیں جب کہ بیوی نہ گھر گئی نہ رجوع سے پہلے عدت گزاری؟

پڑھیے۔۔۔