دعا کی قبوليت

میں یہ سوچ کر پریشان ہوں کہ گزشتہ پچاس سال میں میری کوئی دعا قبول نہیں ہوئی۔ میں نے کبھی کسی حرام یا ناجائز چیز کے حصول کی دعا نہیں کی۔ میری ذہن میں یہ بات ہے کہ جو بھی چیز میں اللہ تعالی سے مانگتا ہوں مجھے نہیں ملتی۔ میرا ذہن بات قبول نہیں کر رہا کہ کہ جو بھی میں نے ان پچاس سالوں میں مانگا وہ میرے حق میں بہتر نہیں تھا۔ اگر اللہ تعالی نے ہماری ردخواست نہیں سننی اور صرف وہ عطا کرنا ہے جو ہمارے لئے اچھا ہے تو پھر دعا کا کیا مقصد رہ جاتا ہے۔

میرا دوسرا سوال یہ ہے کہ اگر اللہ تعالی کا ہر کام حکمت اور عدل پر مبنی ہے تو پھر یہ کہنا کیوں ضروری ہے کہ اللہ دے یا نہ دے، بخشے یا نہ بخشے۔ اسی طرح یہ کہنا کہ "اس کی مرضی"۔ یہ باتیں میری سمجھ میں نہیں آتیں۔

پڑھیے۔۔۔