حضرت مريم عليہ السلام کي الوہيت

آيت "ءانت قلت للناس اتخذوني و امي الهين من دون الله " (المائدہ5: 116) سے بظاہر معلوم ہوتا ہے کہ مسيحيوں نے حضرت مريم کو الہ بنايا۔ ہم ديکھتے کہ مسيحيوں نے عقيدۂ تثليث ميں حضرت مريم کو شامل نہيں کيا۔ آيت کاصحيح مفہوم کيا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

ولادتِ مسیح علیہ السلام

میں آپ سے حضرت عیسی کی پیدائش کے بارے میں پوچھنا چاہتا ہوں۔ اس بارے میں نیاز فتح پوری صاحب نے جو بیان دیا ہے اس کو سامنے رکھ کر جواب دیجیے، کیا ان کا بیان صحیح ہے یا غلط؟ ان کا کہنا یہ ہے کہ حضرت عیسیٰ کی پیدائش معجزہ نہیں بلکہ ایک عام واقعہ ہے۔ حضرت مریم یوسف نجار کی بیوی تھی۔ ان كے دلائل درج ذيل ہيں:

١۔ لفظ احصنت حضرت مریم کے لیے استعمال کیا گیا ہے، اس کا مطلب ہے کو وہ شادی شدہ تھيں۔

٢۔ قرآن كے مطابق حضرت عیسی نے حضرت مریم کی گود میں بات کی۔ اس ميں انہوں نے اپنی نبوت کا دعوٰی کیا بجائے اس كے كہ وہ حضرت مریم كو ان پر لگائے گئے الزام سے بری كرتے ہوئے صورت واقعہ كی وضاحت كرتے۔

پڑھیے۔۔۔