مسافروں کی فلاح و بہبود کے کاموں میں زکوٰۃ کا استعمال

میرا سوال یہ ہے کہ کیا ہم اپنے گلی محلے کے راستوں کی تکالیف کو دور کرنے کے اخراجات میں اپنے اموالِ زکوٰۃ کو صرف کرسکتے ہیں یا نہیں؟ ہم اگر ایسا کریں تودین کی رو سے ہمارے اِس طرح کے عمل کی کیا حیثیت ہو گی؟ کیا ایسا کرنا درست ہو گا؟

پڑھیے۔۔۔