غیر مسلم کی نجات

سورہ مائدہ کی آیت کا ترجمہ ''تم میں سے کوئی مسلمان ہو ، یہودی ہو، صابی ہو، نصرانی ہو، جو کوئی بھی اللہ پر اور آخرت پر ایمان رکھے گا اور نیک اعمال کرے گا اس کے لیے کوئی خوف اور رنج کا مقام نہیں۔''میں نے ایک مولوی کی تقریر سنی۔ اس نے کہا: جو شخص حضور صلی اللہ علیہ وسلم کی شریعت پر ایمان نہیں رکھے گا۔ اس کا ٹھکانا دوزخ ہے خواہ وہ کتنا ہی نیک کیوں نہ ہو۔ آپ اس کی وضاحت کیجیے۔

پڑھیے۔۔۔

رسولوں پر ایمان اور نجات بحوالہ سورۂ بقرہ آیت 62

بعض لوگ کہتے ہیں کہ سورۂ بقرہ کی ایک آیت کے مطابق رسولوں پر ایمان لائے بغیر جنت میں جانا ممکن ہے ۔ کیایہ بات درست ہے؟

پڑھیے۔۔۔

روزِ قیامت نجات کی بنیادیں

عام طور پر مسلمان بالخصوص پاکستانی مسلمان یہ کہتے ہیں کہ گو کہ ہم اپنے گنا ہوں کے باعث جہنم میں جائیں گے لیکن بس چند دنوں کے لیے اور پھر اپنے گنا ہوں کی سزا پانے کے بعد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی شفاعت کی بدولت ہم جنت میں داخل کر دیے جائیں گے۔ میں نے قرآن کا مطالعہ کیا ہے مگر اس میں ایسی کوئی بات نہیں پڑھی، بلکہ میں نے تو یہ پڑھا ہے کہ سب سے پہلے یہ خیال یہودیوں کے اندر پیدا ہوا لیکن اللہ تعالیٰ نے یہ کہہ کر اس کی تردید فرمادی کہ کیا تم نے اللہ سے ایسا کوئی عہد کر رکھا ہے کہ اللہ اس کی خلاف ورزی نہیں کرے گا۔ براہِ مہربانی ذرا اس معاملے کی وضاحت فرمادیں؟

پڑھیے۔۔۔

مسلمانوں اور غیر مسلموں کی نجات

عام طور پر یہ بات کہی جاتی ہے کہ تمام مسلمان جنت میں جائیں گے ۔میرا خیال ہے کہ اس یقین نے ہمیں سچائی اور صحیح راہ سے ہٹادیا ہے کیونکہ ہمارا احساس ہے کہ ہم جو بھی کریں بالآخر تو جنت میں جانا ہی ہے ۔ کیا یہ خیال درست ہے؟

پڑھیے۔۔۔