لفظ کے معنی طے کرنے کا صحیح طریقہ

میرے خیال میں غلام احمد پرویز کی یہ بات درست ہے کہ :

''اعجاز قرآن لفظوں کے انتخاب میں چھپا ہوا ہے، یعنی یہ کہ خدا نے اپنی بات کہنے کے لیے فلاں لفظ ہی کیوں منتخب کیا ہے اور اُس لفظ کا خاص پس منظر کیا ہے، چنانچہ جب اس پس منظر کے حوالے سے بات واضح کی جاتی ہے تو تفسیر کے اس طریقے سے ہمارے اوپر حکمت قرآن کے دروازے کھلتے ہیں۔''

پرویز صاحب کے اس اتنے اچھے نقطہ نظر پر غامدی صاحب کی درج ذیل تنقید میری سمجھ میں نہیں آتی کہ:

''کسی عربی لفظ کے مادے کی تحقیق کا تعلق علم لسانیات سے ہے، یہ ایک دلچسپ موضوع تو ہے، لیکن قرآن فہمی سے اس کا کوئی واسطہ نہیں ہے۔''

جبکہ میرے خیال میں پرویز صاحب نے اپنے اسی طریقے سے سورہ اخلاص کی جو تفسیر کی ہے، وہ طبیعت کو بہت متاثر کرتی ہے۔ میرا سوال یہ ہے کہ پرویز صاحب کے طریق تفسیر میں آخر کیا غلطی ہے اور اس طریقے سے دوسرے علما قرآن کی تفسیر کیوں نہیں کرتے اور وہ لوگوں کو اس طریقے سے کیوں نہیں سمجھاتے؟

پڑھیے۔۔۔

قرآن فہمی کے متعلق اختلاف راے

جاوید احمد صاحب غامدی علامہ پرویز صاحب کی قرآن فہمی سے کس حد تک متفق ہیں ؟ علماے کرام نے پرویز صاحب پر کفر کے بہت فتوے لگائے تھے ، غامدی صاحب کی پرویز صاحب کے بارے میں کیا راے ہے ، کیا وہ صحیح تھے یا غلط؟

پڑھیے۔۔۔

روشن خیال علماء کی تقليد

میں مذہبی علماء کی کچھ تحریریں پڑھ رہا تھا جس میں قرآن، حدیث اور دوسرے مباحث بھی تھے، تا کہ اسلام اور مسلمان کا تصور میری سمجھ میں آئے۔ ان تحریروں میں ایک تحریر جناب غلام احمد پرویز کی لکھی ہوئی ایک تحریر بھی بھی۔ مجھے کہا گیا کہ میں جناب مولانا صاحب کی کسی تحریر پر زیادہ غور نہ کروں کیوں کہ انہیں منکر حدیث قرار دیا جاتا ہے۔ لیکن مجھے ان کی تحریروں کا مطالعہ کر کے لگا کہ ان کی کئی تحریریں قرآن کی کہی گئی باتوں کی کافی حد تک ترجمانی کرتی ہیں۔ برائے مہربانی یہ بتائیے کہ آپ کی ان کے بارے میں کیا رائے ہے جبکہ لوگ انہیں منکر حدیث کہتے ہیں اور ان کی تحریریں کافی روشن خیالی پر مبنی ہیں؟

پڑھیے۔۔۔

جنات كا وجود

ایک سوال عرض ہے کہ جنات کے بارے میں آپ کی کیا رائے ہے؟ پرویز صاحب کا کہنا ہے کہ جنات کا وجود اب اس دنیا سے ختم ہو چکا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ابلیس مایوسی کو کہتے ہیں اور شیطان سے مراد اشتعال ہے۔ برائے مہربانی آپ اس معاملے میں اپنی رائے پیش کیجیے۔

پڑھیے۔۔۔

قرآن ایک نظام

میں اسلام سے متعلق مختلف کتابیں پڑھتا رہتا ہوں۔ آج کل میں پرویز صاحب کی کتابیں پڑھ رہا ہوں۔ کیایہ بات درست ہے کہ قرآن ایک نظام ہے جو اللہ تعالیٰ نے ہمیں محمد صلی اللہ علیہ وسلم کے ذریعے سے دیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

نماز سے متعلق چند سوالات

میں آج کل شدید الجھن سے دو چار ہوں اور اس الجھن کے بیج مجھ میں پرویزی حضرات نے بوئے ہیں۔ ویسے تو میں ان کی احادیث پر بے جا تنقید سے بے زار ہوں اور پرویز صاحب کی قرآن فہمی بھی میرے لیے ادنیٰ درجے میں بھی قابل تبصرہ نہیں کہ میں اس کو جہالت سمجھوں۔ لیکن ان کی نماز پر تنقید نے یقینا کہیں نہ کہیں کچھ گڑ بڑ کر دی ہے اور اس کے باعث میں نے آج کل نماز ترک کر رکھی ہے جس کا مجھے ملال رہتا ہے۔ ان حضرت کی تنقید کے علاوہ بھی میرے ذہن میں کچھ سوال ہیں:

۱۔ کیا نماز اسی طرح سختی سے پانچ وقت کی ادا کرنا فرض ہے جیسا کہ بیان کیا جاتا ہے؟

۲۔ کیا نماز کا ترک کر دینا کافر ہو جانے کے برابر ہے؟

۳۔ اسلام اگر دین فطرت ہے تو نماز کی ہر حال میں پابندی اور کوتاہی کے نتیجے میں شدید ترین گناہ ہے، ایک ایسی بات ہے جو کہ ہر خاص و عام مسلمان پر بیک وقت لا گو ہو، کچھ سمجھ میں نہیں آتی۔

۴۔ میں جو آج کل نماز سے بالکل غافل ہوں تو میرا کیا مقام ہو سکتا ہے اﷲ کے نزدیک؟

۵۔ پانچ وقتی نمازی کو انتہائی بے ایمان بے دیکھا ہے اور بے نمازی کو بے حد ایماندار بھی، ایسا کیوں ہوتا ہے؟

۶۔کیا نماز کے بغیر جنت کا حصول ممکن ہے؟

الغرض اس طرح کے بے شمار وسوسے میرے دامن گیر ہیں۔ برائے مہربانی اس ضمن میں میری اصلاح فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔