پسند کی شادی

میں سویڈن کی ایک لڑکی سے شادی کرنا چاہتا ہوں۔وہ ایک غیر مسلم ہے۔ میں نے اسے انگریزی ترجمے والا قرآن مجید بھیجا تھا، جس کا اس نے مطالعہ کیا اور اسے دین اسلام پسند آیا۔ وہ مسلمان ہونا چاہتی ہے۔

میں اس بات کا تصور بھی نہیں کر سکتا کہ میں کسی اور لڑکی سے شادی کروں، لیکن میرے والدین اس پر بالکل راضی نہیں ہیں کہ میں کسی انگریز لڑکی سے شادی کروں۔ وہ کہتے ہیں کہ اگر تم اس سے شادی کرو گے تو پھر تمھیں ہمارا گھر چھوڑنا پڑے گا۔اس صورت میں مجھے کیا کرنا چاہیے۔

پڑھیے۔۔۔

والدین کی اطاعت اور پسند کی شادی

سوال یہ ہے کہ والدین کی اطاعت کس حد تک کی جائے؟بعض اوقات والدین کی بات ماننے کا دل نہیں چاہتا۔ والدین اگر پسند کی شادی کے خلاف ہوں تو کیا ان کے حکم پر اپنی پسند چھوڑ دینی چاہیے ؟

پڑھیے۔۔۔

اپنی پسند کا اظہار کرنا

میرا نام ذیشان ہے ۔میں یہ پوچھناچاہتا ہوں کہ کیا شادی کے سلسلے میں اپنی خواہش کا اظہار کیا جا سکتا ہے یا اپنی پسند بڑوں کوبتائی جا سکتی ہے تا کہ وہ اس بارے میں سوچیں؟

پڑھیے۔۔۔