جادو اور روحانی علم

میں نے نیٹ پر آپ کی البیان کا مطالعہ کیا ہے۔ اس میں سلیمان علیہ السلام کے وقت میں جادو کے بارے میں آپ نے لکھا ہے کہ یہ ایک دوسرا علم ہے یہ بات مجھے پسند آئی مگر آپ نے یہ بھی لکھا ہے کہ یہ جادو اور روحانی علم دونوں اللہ کے اذن سے کام کرتے ہیں اس پر میرے ذہن میں سوال آتا ہے کہ وماہم بضارین بہ میں بھما ہونا چاہیے تھا۔ جادو کے ساتھ اذن کا لفظ موذوں نہیں لگتا۔

پڑھیے۔۔۔