ڈاڑھی کی اہمیت اور فرضیت

مسلمان کے لیے ڈاڑھی رکھنا کتنا ضروری ہے؟

اس میں کوئی شک نہیں کہ ڈاڑھی سے متعلق صحیح احادیث بھی اسے فرض ثابت کرنے کے لیے کافی نہیں ہیں تو پھر امام ابو حنیفہ، امام شافعی اور امام احمد بن حنبل جیسے جلیل القدر ائمہ نے اسے فرض کیوں سمجھا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

داڑھی کے متعلق ایک روایت

ایک روایت ہے جس میں ہے کہ حضور صلی اللہ علیہ وسلم نے فارس کے لوگوں کو دیکھا جو کہ داڑھی مونڈھے ہوئے تھے تو آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے اپنا چہرہ دوسری طرف پھیر لیا۔ اس روایت کی دینی حیثیت کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔

دین میں داڑھی کی حیثیت

گزاش یہ ہے کہ عوام الناس میں جب ہم اس استدلال کو بیان کرتے ہیں جسےہم درست سمجھتے ہیں تو وہاں اس بات کا موقع نہیں ہوتاکہ دین کا بنیادی تصور واضح کیا جاے یا اصول و مبادی اور انکے درست مخرج و منبع کی وضاحت کی جائے خاص طور پر جہاں پہلے ہی لوگ مخصوص علمی حلقے کے زیر اثر محدود دینی تصور رکھتے ہوں، وہاں تو فوری طور پر چند دلائل درکار ہوتے جو اس استدلال کی قبولیت کہ حق میں دیئے جائیں، سوال سے میرا مقصد صرف یہی تھا کہ جس طرح قرآن حکیم میں انبیا کی داڑھیوں کے متعلق اشارے، نبی اکرم کے واضح ارشادات، صحابہ کا عمل، سلف کی تشریحات، اور امت کا تواتر، داڑھی کی حجیت پر عمومی دلالت کرتے ہیں، اسی عمومی نوعیت کہ چند دلائل اگر فراھم ہوسکتے تو حلقہ احباب میں اپنی بات کو موکد کرنے اور عوام الناس کے اولین اعتراض کا جواب دینے کی کوئی صورت مجھ ایسے مبتدی کے لیے بھی پیدا ہو جاتی۔

پڑھیے۔۔۔

داڑھی کی شرعی حیثیت

میں یہ جاننا چاہتا ہوں کہ داڑھی کی شرعی حیثیت کیا ہے؟ اور یہ بھی کہ کیا علم دین سیکھنے کے لیے داڑھی رکھنا ضروری ہے یا نہیں؟ میرا دوسرا سوال یہ ہے کہ اگر اسلام کے احکامات کو عقلی طور پر ثابت کیا جا سکتا ہے تو وضو کا ٹوٹنا اخراج ریح کی وجہ سے ہوتا ہے تو پھر غسل ہاتھ، منہ اور پیروں کا کیوں کیا جاتا ہے؟ اس میں کیا عقلی توجیہ ہے۔ برائے مہربانی وضاحت فرمائیں۔

پڑھیے۔۔۔

ڈاڑھی رکھنے میں مشکلات

میں ایک خوش حال خاندان سے تعلق رکھتا ہوں۔ میں نے ڈاڑھی رکھی ہوئی ہے جس کی وجہ سے میں اپنے حلقۂ احباب اور فیملی میں پسند نہیں کیا جاتااور مجھے اپنے دوستوں سے جملہ سننا پڑتا ہے کہ ڈاڑھی تمھارے چہرے پر اچھی نہیں لگتی اور خاص طور پر اکٹھے نکلنے میں دوست مجھ سے گریز کرتے ہیں۔ میں نے ایک مفتی صاحب سے پوچھا تھا تو انھوں نے کہاکہ ڈاڑھی کم از کم چار انگلیوں کے برابر ہونی چاہیے اور اس سے کم رکھنے میں گناہ ہوتا ہے۔ کیا میں ڈاڑھی کٹوا سکتا ہوں؟

پڑھیے۔۔۔

ڈاڑھی کا مسئلہ

میں نے غامدی صاحب کو یہ فرماتے سنا ہے کہ ڈاڑھی کا دینی احکام سے کوئی تعلق نہیں اور ڈاڑھی رکھنا واجب نہیں، لیکن علامہ راشدی صاحب نے اپنے خطاب میں ایک حدیث کا حوالہ دیا ہے کہ ''مجھے میرے رب نے حکم دیا ہے کہ میں ڈاڑھی بڑھاؤں اور مونچھوں کو گھٹاؤں۔'' اس ضمن میں آپ کی کیا رائے ہے؟

پڑھیے۔۔۔

داڑھی کا مونڈنا

میں ایک سوال کے بارے میں آپ کی رائے جاننا چاہتا ہوں۔ میں نے غامدی صاحب کو کہتے سنا ہے کہ داڑھی رکھنا احکام دین میں لازم یا فرض نہیں ہے۔ لیکن علامہ راشدی صاحب نے ایک حدیث قدسی بیان کی ہے جس میں یہ کہا گیا ہے کہ "اللہ تعالیٰ فرماتا ہے کہ داڑھی رکھو اور مونچھ کاٹو)۔ برائے مہربانی اس بارے میں اپنا نقطہ نظر بیان فرمائیے۔

پڑھیے۔۔۔

مسلمان مرد کےلیے داڑھی کا حکم

ڈاڑھی کے مسئلے میں ہمارے مذہبی حلقوں میں بالعموم یہ نقطۂ نظر پایا جاتا ہے کہ مسلمان مرد کے لیے ڈاڑھی رکھنا "واجب"یعنیدینی طور پر لازم ہے۔پھر یہ دعویٰ بھی ہمارے معاشرے میں عمومی شہرت رکھتا ہے کہ ڈاڑھی کے بارے میں یہی رائے نہ صرف یہ کہ ائمۂ اربعہ اور اُمت کے تمام فقہا کی ہے،بلکہ مذاہب اربعہ کے تمام علما کا اِس پر اجماع ہے۔یہ بتائیں کہ فقہ اسلامی کی رو سے علمی طور پر ڈاڑھی کے مسئلے میں یہ مقدمہ آیا درست ہے ؟ کیا واقعتاً اِس مسئلےمیں اُمت کا اتفاق ہے ؟ اگر ہے تو اِس کی دلیل کیا ہے ؟ اور اگر نہیں ہے تو یہ بتائیں کہ ڈاڑھی کے مسئلے میں علما ے سلف وخلف نے کیا آرا پیش کی ہیں ؟

پڑھیے۔۔۔

ڈاڑھی رکھنا نہ واجب ہے يا سنت

میرا سوال یہ ہے کہ آپ کہتے ہیں کہ ڈاڑھی رکھنا نہ واجب ہے نہ سنت اور نہ ہی یہ دین ہے۔ آپ سنت کے لئے جو اصول بتاتے ہیں وہ بھی صحیح ہیں لیکن جب میں کسی سے یہ بات کرتا ہوں تو وہ یہ کہتا ہے کہ فلاں حدیث میں نبی صلی اللہ علیہ و سلم نے ایفاء اللحیہ کا حکم دیا ہے- لہذا یہ واجب ہے۔ میں یہ چاہتا ہوں کہ آپ مجھے کوئی اللہ تعالی یا نبی صلی اللہ علیہ و سلم کا کوئی ایسا قول بتائیں کہ جس میں ایک حکم صادر ہوا ہو مگر اتفاق امت سے اسے لازم نہ جانا جاتا ہو بلکہ اسے ہماری صوابدید پر چھوڑا جاتا ہو۔

پڑھیے۔۔۔

اسلام میں داڑھی کی حیثیت

اسلام میں داڑھی کا کیا مقام ہے ؟ کب ا س کا حکم ہوا؟ آپ کے حلقے کے بعض نمائندہ افراد کے مقررہ شرعی داڑھی نہ رکھنے کی وجہ کیا ہے؟

پڑھیے۔۔۔