• TAGS:
  • {tag}
  • {/exp:tag:tags}

تقدیر اور دعا

کیا ہم اپنی تقدیر دعا سے بدل سکتے ہیں۔ یا جو اللہ نے ہمارے مقدر میں لکھ دیا ہے وہی ہوگا۔اگر معاملہ یہ ہے تو پھر ہم دعا کیوں کرتے ہیں۔

 اللہ نے بہت سے فیصلے انسان پر چھوڑ دیے ہیں۔انسان جو فیصلہ کرتا ہے کیا ہم یہ کہہ سکتے ہیں کہ وہی خدا کو منظور تھا۔ایک مثال کے مطابق :اگر کوئی اپنی پسند کی شادی کرنا چاہتا ہےاور لڑکی کے گھر والے سب جانتے ہوئے بھی اس کی شادی کہیں اور کر دیں تو کیا یہ کہنا درست ہوگا کہ اللہ کی جو مرضی تھی یا جو مقدر تھا وہی ہوا۔کون ذمہ دار ہے۔ لیکن میرا خیال یہ ہے کہ یہ اللہ کا فیصلہ نہیں تھا۔ یہ تو اس کے گھر والوں نے جان بوجھ کر کیا کیونکہ اللہ نے ہمیں یہ حق دیا کہ ہم اپنی پسند کی شادی کریں۔ تو اس صورت حال میں ہمیں کیا کہنا چاہیے۔ جو خدا کی رضا، یا اس کے گھر والوں کو الزام دینا چاہیے۔

پڑھیے۔۔۔
  • TAGS:
  • {tag}
  • {/exp:tag:tags}

Jinn and Men created for Hell?

Dear Reader,

Assalaamu alaikum. My question is regarding taqdeer. It is a subject that nurtures countless different interpretations among religious scholars, but the one I find most satisfying is that of Ghamidi sahab. He holds the opinion that man is only bound in some issues, such as where will he be born, his physical and mental abilities, his age at the time of death etc, and for the rest of the issues he is not predestined and decides his own future through his decisions in matters of morality. However, this doctrine seems to be in contradiction with Quran, Surah al A'raf [7:179]. Allah says he has "certainly created for Hell many of the jinn and mankind". Does this verse not tell us that these humans and jinn are predestined to go to hell. It seems their sole purpose was to suffer in Hell. Secondly this seems to be in contradiction to some of Allah's attributes such as the Merciful and the Beneficent. Why would a Loving and all Merciful God create some beings so that they can only suffer in Hell. I am eagerly awaiting your valuable reply.

Read More