فطری ہدایت

سوال:

انسان کو جب اس دنیا میں بھیجا گیا تو کیا وہ اپنے ساتھ بھی کچھ ہدایت لے کر آیا ہے؟


جواب:

بنیادی چیزیں تو اسی وقت انسان کی فطرت میں الہام کر دی گئی تھیں۔ مثلاً ایک خدا کا شعور، اس کے سامنے جواب دہی کا احساس، اچھے عمل کا تصور۔ خاص طور پر خیر و شر کے بارے میں بنیادی شعور۔ اس کے علاوہ بنیادی اخلاقیات ہیں جن کو قرآن نے بیان کیا ہے کہ انسان کو ہر حال میں انصاف پر قائم رہنا ہے، اپنے رشتہ داروں اور اعزہ کے ساتھ حسن سلوک کرنا ہے۔ عمومی طور پر زندگی میں ایثار اور احسان کا رویہ اختیار کرنا ہے، ان چیزوں سے بچنا ہے جو حق تلفی کا باعث بنتی ہیں اور جو لوگوں کی جان و مال اور آبرو کے خلاف ہوتی ہیں۔ اس طرح کی تمام بنیادی حقیقتیں انسان کو بتا دی گئی تھیں۔ انبیا علیہم السلام ان کی یاددہانی کرتے ہیں، ان کی تعیین کرتے ہیں، اگر کوئی ابہام ہو تو اسے دور کرتے ہیں، ان سے متعلق کوئی سوال پیدا ہو جائے تو اس کا جواب دیتے ہیں۔ ہماری فطرت کے اندر جو کچھ ودیعت کیا گیا ہے ، انبیا علیہم السلام اس کو نمایاں کرتے ہیں۔

answered by: Javed Ahmad Ghamidi

About the Author

Javed Ahmad Ghamidi


Javed Ahmad Ghamidi was born in 1951 in a village of Sahiwal, a district of the Punjab province. After matriculating from a local school, he came to Lahore in 1967 where he is settled eversince. He did his BA honours (part I) in English Literature and Philosophy from the Government College, Lahore in 1972 and studied Islamic disciplines in the traditional manner from various teachers and scholars throughout his early years. In 1973, he came under the tutelage of Amin Ahsan Islahi (d. 1997) (http://www.amin-ahsan-islahi.com), who was destined to who have a deep impact on him. He was also associated with the famous scholar and revivalist Abu al-A‘la Mawdudi (d. 1979) for several years. He taught Islamic studies at the Civil Services Academy for more than a decade from 1979 to 1991.

Answered by this author