غیر زائر ین حرم کی قربانی

سوال:

زائرین حرم کے علاوہ عام مسلمان جو اپنے اپنے علاقوں میں قربانی کرتے ہیں، کیا ان کا یہ قربانی کرنا درست ہے، جیسا کہ پاکستان میں کی جاتی ہے؟کیا پاکستان میں قربانی صحیح طریقے سے کی جا رہی ہے؟


جواب:

زائرین حرم کے علاوہ عام مسلمان جو اپنے اپنے علاقوں میں قربانی کرتے ہیں، ان کا یہ قربانی کرنا بالکل درست ہے۔ یہ قربانی نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے عمل سے ثابت ہے:

عَنْ اَنَسٍ... وَضَحّٰی (النَّبِیُّ) بِالْمَدِيْنَةِ کَبْشَيْنِ اَمْلَحَيْنِ اَقْرَنَيْنِ مُخْتَصَرًا.(بخاری، رقم١٧١٢)

''حضرت انس سے روایت ہے... نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے مدینہ میں دو سیاہی و سفیدی مائل رنگ کے، سینگوں والے مینڈھوں کو پہلو کے بل لٹا کر، ان کی قربانی کی۔''

عن البراء قال خرج النبی صلی اللّٰه عليه وسلم يوم أضحی إلی البقيع فصلی رکعتين ثم أقبل علينا بوجهه وقال إن أول نسکنا فی يومنا هذا أن نبدأ بالصلوٰة ثم نرجع فننحر فمن فعل ذلك فقد وافق سنتنا....(بخاری، رقم٩٧٦)

''براء (بن عازب رضی اللہ عنہ) سے روایت ہے کہ نبی صلی اللہ علیہ وسلم عید الاضحی کے دن (مدینے کے میدان) بقیع کی طرف گئے اور نماز عید کی دو رکعات پڑھائیں، پھر ہماری طرف رخ کر کے فرمایا: ہماری آج کی سب سے مقدم عبادت یہ ہے کہ ہم پہلے نماز پڑھیں، پھر نماز سے فارغ ہونے کے بعد قربانی کریں۔ جس نے اسی طرح کیا، اس نے ہماری سنت کے مطابق عمل کیا ...۔ ''

پاکستان میں قربانی کا جو طریقہ رائج ہے، اس میں اصولاً کوئی غلطی نہیں ہے۔

answered by: Rafi Mufti

About the Author

Muhammad Rafi Mufti


Mr Muhammad Rafi Mufti was born on December 9, 1953 in district Wazirabad Pakistan. He received formal education up to BSc and joined Glaxo Laboratories Limited. He came into contact with Mr Javed Ahmad Ghamidi in 1976 and started occasionally attending his lectures. This general and informal learning and teaching continued for some time until he started regularly learning religious disciplines from Mr Ghamidi in 1984. He resigned from his job when it proved a hindrance in his studies. He received training in Hadith from the scholars of Ahl-i Hadith School of Thought and learned Fiqh disciplines from Hanafi scholars. He was trained in Arabic language and literature by Javed Ahmad Ghamidi. He is attached to Al-Mawrid from 1991.

Answered by this author