ہم جنسی اور وطی فی الدبر

سوال:

قرآن کے مطابق مرد کا مرد کے ساتھ جنسی تعلق حرام ہے۔ کیا عورت کا عورت کے ساتھ جنسی تعلق بھی حرام ہے؟ کیا مرد عورت کی پچھلی شرم گاہ استعمال کر سکتا ہے؟


جواب:

جس وجہ سے مرد کا مرد سے جنسی تعلق حرام ہے ، اسی وجہ سے عورت کا عورت سے جنسی تعلق بھی حرام ہے۔ اللہ تعالیٰ نے جنسی تعلق کی ایک ہی صورت کو جائز قرار دیا ہے اور وہ یہ ہے کہ عورت اور مرد نکاح کے ذریعے سے ایک دوسرے سے یہ تعلق قائم کریں ۔ میاں بیوی کے علاوہ ہر صورت قرآن کے نزدیک بے حیائی، بدکاری اور نافرمانی ہے۔ ہم جنسی اللہ تعالیٰ کے سکھائے ہوئے طریقے سے انحراف ہے۔ اللہ کی بنائی ہوئی فطرت میں بگاڑ ہے اور اللہ کی دی ہوئی واضح شریعت کے بھی خلاف ہے۔ آپ کے سوال کا آخری حصہ جس فعل سے متعلق ہے، وہ بھی اپنی نوعیت میں اللہ تعالیٰ کی بنائی ہوئی فطرت سے انحراف ہے۔ اللہ تعالیٰ نے قرآن مجید میں واضح طور پر بیان کر دیا ہے کہ عورت سے جنسی تعلق اسی طرح قائم کرو جس طرح اللہ نے حکم دیاہے ۔ حکم سے مراد فطری طریقہ ہے جو انسان کو اچھی طرح معلوم ہے، اس سے انحراف کسی طرح جائز نہیں ہے۔

answered by: Talib Mohsin

About the Author

Talib Mohsin


Mr Talib Mohsin was born in 1959 in the district Pakpattan of Punjab. He received elementary education in his native town. Later on he moved to Lahore and passed his matriculation from the Board of Intermediate and Secondary Education Lahore. He joined F.C College Lahore and graduated in 1981. He has his MA in Islamic Studies from the University of Punjab. He joined Mr Ghamidi to learn religious disciplines during early years of his educational career. He is one of the senior students of Mr Ghamidi form whom he learnt Arabic Grammar and major religious disciplines.

He was a major contributor in the establishment of the institutes and other organizations by Mr Ghamidi including Anṣār al-Muslimūn and Al-Mawrid. He worked in Ishrāq, a monthly Urdu journal, from the beginning. He worked as assistant editor of the journal for many years. He has been engaged in research and writing under the auspice of Al-Mawrid and has also been teaching in the Institute.

Answered by this author