جوڑے آسمان پر بنتے ہیں

سوال:

تقدیر مکمل طور پر لکھی ہوئی ہے۔ لوگ کہتے ہیں کہ جوڑے آسمان پر بنتے ہیں۔ اگر کسی کو میرے لیے لکھ دیا گیا ہے تو میں اس سے شادی پر مجبور ہوں۔ مجھے صرف اسے ڈھونڈنا ہے ، بلکہ نہ بھی ڈھونڈوں تو لکھا ہوا مجھے مل ہی جائے گا۔


جواب:

تقدیر کا یہ بیان جبریت ہے۔ قرآن وحدیث سے معلوم ہوتا ہے کہ اللہ تعالیٰ نے انسانی اعمال میں جبر کا طریقہ اختیار نہیں کیا۔ انسان فیصلے کرنے ، ان پر عمل کرنے یا فیصلے تبدیل کرنے میں پوری طرح آزاد ہے۔ شادی ہی کی مثال کو لے لیجیے رشتہ کرنے کا سارا عمل انسان اسی طرح کرتا ہے ، جس طرح اس معاملے میں اس پر کوئی قدغن نہیں ہے۔ اللہ تعالیٰ کی مداخلت ضرور ہوتی ہے۔وہ مداخلت بھی آزمایش کے پہلو سے ہے تاکہ آزمایش اتنی ہی رہے جتنی اللہ تعالیٰ رکھنا چاہتے ہیں۔ ہم اپنی تدبیر کے باوجود اللہ تعالیٰ سے دعا کرتے ہیں ، اس کی وجہ یہ ہے کہ ہمارا علم اور سعی کی طاقت ، دونوںمحدود ہیں۔اللہ تعالیٰ کی رحمت ، برکت اور توفیق کے بغیر کوئی کام نہ وقوع پذیر ہو سکتا ہے اور نہ اس میں خیر پیدا ہو سکتی ہے۔ خود دعا کرنے کی تعلیم اللہ تعالیٰ نے دی ہے۔ اگر اصل چیز جبریت ہے تو دعا ایک بے معنی چیز بن جاتی ہے۔

answered by: Talib Mohsin

About the Author

Talib Mohsin


Mr Talib Mohsin was born in 1959 in the district Pakpattan of Punjab. He received elementary education in his native town. Later on he moved to Lahore and passed his matriculation from the Board of Intermediate and Secondary Education Lahore. He joined F.C College Lahore and graduated in 1981. He has his MA in Islamic Studies from the University of Punjab. He joined Mr Ghamidi to learn religious disciplines during early years of his educational career. He is one of the senior students of Mr Ghamidi form whom he learnt Arabic Grammar and major religious disciplines.

He was a major contributor in the establishment of the institutes and other organizations by Mr Ghamidi including Anṣār al-Muslimūn and Al-Mawrid. He worked in Ishrāq, a monthly Urdu journal, from the beginning. He worked as assistant editor of the journal for many years. He has been engaged in research and writing under the auspice of Al-Mawrid and has also been teaching in the Institute.

Answered by this author