کیا کیا چیز سنت ہے؟

سوال:

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے کون کون سے اعمال سنت میں شامل ہیں۔


جواب:

اس سوال کے جواب میں استاد محترم کی کتاب اصول و مبادی سے ایک اقتباس نقل کر رہا ہوں۔ اس میں انھوں نے ان چیزوں کو ایک ترتیب سے بیان کر دیا ہے جو ان کے نزدیک نبی صلی اللہ علیہ وسلم نے بحیثیت سنت جاری کی ہیں۔ اس فہرست کا مطالعہ کرنے کے لیے ضروری ہے کہ آپ ان کی سنت کی تعریف کو ذہن میں رکھیں۔ لکھتے ہیں:

اس(سنت کے) ذریعے سے جو دین ہمیں ملا ہے ، وہ یہ ہے:

عبادات١۔ نماز۔ ٢۔ زکوٰۃ اور صدقہ فطر۔ ٣۔ روزہ واعتکاف۔ ٤۔ حج وعمرہ۔ ٥۔ قربانی اور ایام تشریق کی تکبیریں

معاشرت١۔ نکاح وطلاق اور ان کے متعلقات۔٢۔ حیض ونفاس میں زن وشو کے تعلق سے اجتناب۔

خورونوش١۔ سؤر، خون، مردار اور خدا کے سوا کسی اور کے نام پر ذبح کیے گئے جانور کی حرمت۔٢۔ اللہ کا نام لے کر جانوروں کا تذکیہ۔

رسوم وآداب١۔ اللہ کا نام لے کر اور دائیں ہاتھ سے کھانا پینا۔ ٢۔ملاقات کے موقع پر 'السلام علیکم' اور اس کا جواب۔ ٣۔ چھینک آنے پر 'الحمد للہ' اور اس کے جواب میں'یرحمک اللہ'۔ ٤۔ نومولود کے دائیں کان میں اذان اور بائیں کان میں اقامت۔ ٥۔ مونچھیں پست رکھنا۔ ٦۔ زیر ناف کے بال کاٹنا۔ ٧۔ بغل کے بال صاف کرنا۔ ٨۔ بڑھے ہوئے ناخن کاٹنا۔ ٩۔ لڑکوں کا ختنہ کرنا۔ ١٠۔ ناک، منہ اور دانتوں کی صفائی۔١١۔ استنجا۔ ١٢۔ حیض ونفاس کے بعد غسل۔ ١٣۔غسل جنابت۔ ١٤۔ میت کا غسل۔

١٥۔ تجہیز وتکفین۔ ١٦۔ تدفین۔ ١٧۔عید الفطر۔ ١٨۔ عیدالاضحی۔

The above opinion was revised by Javed Ahmad Ghamidi in line with the new research conducted by Aamir Gazdar. Here is the link to Aamir Gazdar's article

“نو مولود کے کانوں میں اذان و اقامت کی شرعی حیثیت”

answered by: Talib Mohsin

About the Author

Talib Mohsin


Mr Talib Mohsin was born in 1959 in the district Pakpattan of Punjab. He received elementary education in his native town. Later on he moved to Lahore and passed his matriculation from the Board of Intermediate and Secondary Education Lahore. He joined F.C College Lahore and graduated in 1981. He has his MA in Islamic Studies from the University of Punjab. He joined Mr Ghamidi to learn religious disciplines during early years of his educational career. He is one of the senior students of Mr Ghamidi form whom he learnt Arabic Grammar and major religious disciplines.

He was a major contributor in the establishment of the institutes and other organizations by Mr Ghamidi including Anṣār al-Muslimūn and Al-Mawrid. He worked in Ishrāq, a monthly Urdu journal, from the beginning. He worked as assistant editor of the journal for many years. He has been engaged in research and writing under the auspice of Al-Mawrid and has also been teaching in the Institute.

Answered by this author