مشرک کی تعریف

سوال:

ہم نے ایک سوال مشرک کے پیچھے نماز پڑھنے کے متعلق بھیجا تھا جس کا جواب ہم نے پڑھا، لیکن اس جواب سے ہمیں صحیح رہنمائی حاصل نہیں ہوئی کیوں کہ جناب ریحان احمد یوسفی صاحب نے شرک کے متعلق قرآنی آیات کو اہل مکہ رسول کے مخاطبین کے ساتھ خاص قرار دیا ہے۔ مجھے اس بات کا اعتراف ہے کہ موجودہ دور کے شرک کرنے والے لوگ مشرک نہیں کہلاتے مگر نماز کے سلسلے میں آپ کا بیان کردہ موقف شک کی بنیاد پر مبنی ہے اور عبادت کے لیے لازمی ہے کہ یہ شک سے پاک ہو۔ مزید یہ کہ شرک کے متعلق آیات میں کوئی مخصوصیات اور استثنا نہیں۔ اگر آپ کا موقف اس کے منافی ہے تو ان آیات پر عمل کرنے کی صورت کیا ہو گی؟ کیوں کہ آپ کا کہنا یہ ہے کہ ان آیات کے مخاطب وہ لوگ تھے جنھوں نے شرک کی حقیقت واضح ہونے کے بعد بھی شرک کو اپنائے رکھا۔ برائے مہربانی اس بات کی وضاحت بھی کریں کہ شرک کیا ہے؟


جواب:

آپ چونکہ اصولی طور پر ہمارے نقطہ نظر کوغلط سمجھتے ہیں اس لیے ہمارے اور آپ کے درمیان سوال جواب کی سطح پر ہونے والی کسی گفتگو کا شاید کوئی فائدہ نہ ہو۔ تاہم اگر آپ اس معاملے میں ہمارے نقطہ نظرکی مزید تفصیل جاننا چاہتے اور اس سلسلے میں پوچھے گئے اپنے سوالات کا جواب چاہتے ہیں تو لفظ 'المشرکون' کے عنوان سے اسی نوعیت کا ایک مکالمہ لاہور سے شائع ہونے والے ماہ نامہ اشراق کے اپریل 1997ء کے شمارے میں موجودہے۔ آپ براہِ کرم اس کا مطالعہ فرمالیجیے۔

answered by: Rehan Ahmed Yusufi

About the Author

Rehan Ahmed Yusufi


Mr Rehan Ahamd Yusufi started his career as a teacher and an educationist after obtaining Masters Degrees in Islamic Studies and Computer Technology from the Karachi University with distinction. He started his professional career by serving as a system analyst in a commercial organization. In 1997 he joined service in Saudi Arabia and later immigrated to Canada. 

Mr Rehan Ahmad Yusufi has been attached to people of learning from the beginning of his education career. In 1991, he was introduced to Mr Javed Ahmad Ghamid, a Pakistani religious scholar. After his return from Canada in 2002, Mr Yusufi joined Al-Mawrid, a Foundation for Islamic Research and Education, founded by Mr Ghamidi. Presently Mr Yusufi is an Associate Fellow at Al-Mawrid. His job responsibilities include propagation and communication of the religion as well as religious and moral instruction of people. He is heading a training center in Karachi which offers moral training and religious education to the masses.

Mr Rehan Ahamd Yusufi has very important works and booklets to his credit. The most important of his works include Maghrib sai Mashriq Tak, Urooj-o-Zawaal ka Qanoon awr Pakistan, and Wuhi Rah Guzar. He is also the Chief Editor of the Da’wah edition of the monthly Ishraq published from Karachi. The journal is also published online on its site http://www.ishraqdawah.com

Answered by this author