نبی اور رسول میں فرق

سوال:

میں نے غامدی صاحب کے ایک بیان میں نبی اور رسول کے مابین فرق کو بیان کرتے ہوئے سنا ہے۔ اور میں اپنے علم میں مزید اضافے کے لیے یہ پوچھنا چاہتا ہوں کہ وہ کون سے ۲۶ پیغمبر ہیں جن کا قرآن میں ذکر آیا ہے جنہیں رسول کہا گیا ہے؟ دوسرا یہ کہ حضرت عیسیٰؑ بھی رسول تھے پھر کیوں وہ اپنی زندگی میں اپنے مخالفین سے جیت نہیں پائے؟ برائے مہربانی وضاحت فرمائیں۔


جواب:

آپ کے سوالات کے جواب حسبِ ذیل ہیں:

١۔ قرآن کریم ایک صحیفہ رسالت ہے۔ اس میں رسولوں اور ان کی اقوام کے حالات ہی بیان ہوئے ہیں۔ اس سے مستثنیٰ صرف انبیاے بنی اسرائیل یا حضرت آدم علیہ السلام ہیں۔ چنانچہ قرآن کریم تفصیل کے ساتھ حضرت نوح، حضرت ابراھیم، حضرت لوط، حضرت شعیب، ہود، حضرت صالح، اور حضرت یونس علیھم السلام کی داستانیں تفصیل کے ساتھ بیان کرتا ہے۔ جبکہ انبیاے بنی اسرائیل میں سے حضرت موسیٰ، حضرت عیسیٰ اور حضرت الیاس کو رسولوں کی فہرست میں شمار کرکے اس حیثیت میں ان کی داستان سناتا ہے ۔ اسی طرح یہ بات بھی واضح رہے کہ قرآن کریم اصل میں رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی داستانِ حیات ہے جو خود ایک رسول تھے۔

٢۔ قرآن کریم اس بات میں واضح ہے کہ جب اللہ تعالیٰ نے حضرت عیسیٰ علیہ السلام کو اپنی طرف اٹھالیا جو گویا ان کی ہجرت کے مترادف تھا۔ اس کے بعد طے ہوگیا کہ بطور سزا قیامت تک بنی اسرائیل پر مسیح کے ماننے والوں کا غلبہ رہے گا، (آل عمران:55) اور ان پر ایسے لوگ قیامت تک مسلط ہوتے رہیں گے جو انھیں عذاب کا مزہ چکھائیں گے، (اعراف:67)۔ بنی اسرائیل کو دوسری اقوام کے برعکس اس لیے نہیں ختم کیا گیا کہ وہ توحید سے بہرحال وابستہ تھے۔ اس لیے ان کی سزا ہلاکت کے بجائے مغلوبیت طے ہوئی۔ باقی جو چیلنجز بنی اسرائیل نے حضرت عیسیٰ کو دیے تھے اللہ تعالیٰ نے انھیں ان سے بالکل محفوظ رکھا، (آل عمران: 55)۔

answered by: Rehan Ahmed Yusufi

About the Author

Rehan Ahmed Yusufi


Mr Rehan Ahamd Yusufi started his career as a teacher and an educationist after obtaining Masters Degrees in Islamic Studies and Computer Technology from the Karachi University with distinction. He started his professional career by serving as a system analyst in a commercial organization. In 1997 he joined service in Saudi Arabia and later immigrated to Canada. 

Mr Rehan Ahmad Yusufi has been attached to people of learning from the beginning of his education career. In 1991, he was introduced to Mr Javed Ahmad Ghamid, a Pakistani religious scholar. After his return from Canada in 2002, Mr Yusufi joined Al-Mawrid, a Foundation for Islamic Research and Education, founded by Mr Ghamidi. Presently Mr Yusufi is an Associate Fellow at Al-Mawrid. His job responsibilities include propagation and communication of the religion as well as religious and moral instruction of people. He is heading a training center in Karachi which offers moral training and religious education to the masses.

Mr Rehan Ahamd Yusufi has very important works and booklets to his credit. The most important of his works include Maghrib sai Mashriq Tak, Urooj-o-Zawaal ka Qanoon awr Pakistan, and Wuhi Rah Guzar. He is also the Chief Editor of the Da’wah edition of the monthly Ishraq published from Karachi. The journal is also published online on its site http://www.ishraqdawah.com

Answered by this author