نبی صلی اللہ علیہ وسلم نور یا بشر

سوال:

کیا نبی صلی اللہ علیہ وسلم نور تھے، برائے مہربانی حوالوں کی روشنی میں رہنمائی فرمائیے؟


جواب:

نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے بارے میں قرآن مجید بالکل واضح ہے کہ آپ بشر تھے۔ نبی صلی اللہ علیہ وسلم کے مخالفین نے جب جب آپ کے بشر ہونے کی بنا پر آپ کی رسالت کا انکار کیا یا آپ کے بشر ہونے کو ہدف طعن بنایا تو قرآن مجید میں کسی بھی موقع پر یہ نہیں کہا گیا کہ آپ تو سراپا نور ہیں، تم انھیں بشر کیوں قرار دے رہے ہو، بلکہ اس کے جواب میں آپ کی زبان سے کہلوایا گیا کہ آپ بشر ہیں۔ مثلاً سورۂ کہف (18: 110) میں ہے:

 'قُلْ اِنَّمَآ اَنَا بَشَرٌ مِّثْلُکُمْ يُوْحٰۤی اِلَيَّ'

(کہہ دو :میں تمھاری ہی طرح ایک بشر ہوں، میری طرف وحی کی جاتی ہے)۔

اب سوال یہ ہے کہ یہ تصور کہاں سے پیدا ہوا ہے؟ غالب امکان یہ ہے کہ یہ تصور وحدت الوجود کے ماننے والوں کے ہاں سے عوام میں پھیلا ہے۔ جس طرح وحدت الوجود کا تصور قرآن مجید کے تصور توحید کے بالکل منافی ہے، اسی طرح اس کے زیر اثر بننے والے اس طرح کے خیالات بھی بے بنیاد ہیں۔

answered by: Talib Mohsin

About the Author

Talib Mohsin


Mr Talib Mohsin was born in 1959 in the district Pakpattan of Punjab. He received elementary education in his native town. Later on he moved to Lahore and passed his matriculation from the Board of Intermediate and Secondary Education Lahore. He joined F.C College Lahore and graduated in 1981. He has his MA in Islamic Studies from the University of Punjab. He joined Mr Ghamidi to learn religious disciplines during early years of his educational career. He is one of the senior students of Mr Ghamidi form whom he learnt Arabic Grammar and major religious disciplines.

He was a major contributor in the establishment of the institutes and other organizations by Mr Ghamidi including Anṣār al-Muslimūn and Al-Mawrid. He worked in Ishrāq, a monthly Urdu journal, from the beginning. He worked as assistant editor of the journal for many years. He has been engaged in research and writing under the auspice of Al-Mawrid and has also been teaching in the Institute.

Answered by this author