شادی کے وقت سیدہ عائشہ کی عمر

سوال:

حضور صلی اللہ علیہ وسلم سے شادی کے وقت سیدہ عائشہ کی عمر کیا تھی؟ کیا آپ ٦یا٩ سال کی تھیں جیسا کہ روایتوں میں بیان ہوا ہے؟


جواب:

عربی زبان میں اعداد کو بولنے کا ایک الگ طریقہ ہے جو ہماری اردو میں اس طرح معروف نہیں ہے۔ مثال کے طور پر رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے شب قدر کے بارے میں یہ بیان کیا ہے کہ پچیسویں،ستائیسویں یا انتیسویں تاریخ کو اس کے ہونے کا امکان ہے۔ یہاں ہونا تو یہ چاہیے تھا کہ آپ پچیس یا ستائیس کا عدد ارشاد فرماتے۔ لیکن آپ نے فرمایا ہے کہ چھٹی رات کے بعد، ساتویں رات کے بعد، نویں رات کے بعد۔ اب ان تاریخوں کے ساتھ یہ چیز مقدر مان لی گئی ہے کہ بیس کا عدد تو بولا ہی جا رہا ہے، جس سے مل کر یہ پچیس یا ستائیس یا انتیس تاریخ قرار پاتی ہے۔

بالکل اسی اسلوب میں ایک موقع پر جب سیدہ عائشہ رضی اللہ عنہا نے اپنی عمر بیان کی تو سولہ کا چھ رہ گیا اور انیس کا نو رہ گیا ہے۔ اس سے لوگوں کو غلط فہمی ہوگئی اور عام شہرت بھی اسی بات کی ہوگئی۔ موجودہ زمانے میں بعض محققین نے اس پر بڑا وقیع کام کیا ہے اور اس بات کو دلائل سے ثابت کیا ہے کہ جب سیدہ کی منگنی یا نکاح ہو ا تو اس وقت وہ قریباً سولہ سال کی تھیں اور جب رخصتی ہوئی تو ان کی عمر انیس سال کے قریب تھی۔ (جون ٢٠٠٤)

answered by: Javed Ahmad Ghamidi

About the Author

Javed Ahmad Ghamidi


Javed Ahmad Ghamidi was born in 1951 in a village of Sahiwal, a district of the Punjab province. After matriculating from a local school, he came to Lahore in 1967 where he is settled eversince. He did his BA honours (part I) in English Literature and Philosophy from the Government College, Lahore in 1972 and studied Islamic disciplines in the traditional manner from various teachers and scholars throughout his early years. In 1973, he came under the tutelage of Amin Ahsan Islahi (d. 1997) (http://www.amin-ahsan-islahi.com), who was destined to who have a deep impact on him. He was also associated with the famous scholar and revivalist Abu al-A‘la Mawdudi (d. 1979) for several years. He taught Islamic studies at the Civil Services Academy for more than a decade from 1979 to 1991.

Answered by this author