واقعہ معراج

سوال:

میں چند سوالات عرض کرنا چاہتا ہوں۔

1۔ معراج کو سائنسی طور پر کیسے ثابت کیا جا سکتا ہے؟

2 ۔ کیا معراج کا منکر مسلمان ہے؟

3 ۔ جاگنے پر یہ کیسے معلوم ہوتا ہے کہ مجھ پر غسل واجب ہے؟

برائے مہربانی رہنمائی فرمائیے۔


جواب:

امید ہے آپ بخیر ہوں گے۔ آپ کے سوالوں کے جواب حاضر ہیں۔

1۔ معراج کو سائنسی طور پر کیسے ثابت کیا جا سکتا ہے؟

معراج کا واقعہ ایک معجزہ ہے۔ معجزہ فزیکل لاز کو توڑ کر ظاہر ہوتا ہے۔ اس لیے اسے سائنسی طور پر ثابت کرنا معجزے کی اصل کو نہ ماننا ہے۔ قرآن مجید سے معلوم ہوتا ہے کہ حضور کا یہ سفر روحانی تھا روحانی دنیا پر مادی دنیا کے قوانین لاگو نہیں ہوتے ۔ یہاں یہ بات واضح رہے کہ معجزات خدا کی قدرت اور مداخلت کا مظہر ہوتے ہیں۔ سائنس کے قوانین کو اٹل ماننے والا درحقیقت خدا کے حی و قیوم ہونے کا انکار کرتا ہے۔

2 ۔ کیا معراج کا منکر مسلمان ہے؟

معراج کے انکار کا مطلب یہ ہے کہ یہ شخص مذہب کو بطور مذہب نہیں پہچانتا ۔ اس کی اصلاح کی ضرورت ہے۔ یہ کم از کم اس خطرے سے ضرور دوچار ہے کہ قیامت کے دن اس کا ایمان اپنی قیمت نہ پا سکے۔

3 ۔ جاگنے پر یہ کیسے معلوم ہوتا ہے کہ مجھ پر غسل واجب ہے؟

اگر خواب یاد ہو اور اس میں انزال ہوا ہو یا خواب تو یاد نہ بو لیکن کپڑوں پر انزال کے داغ ہوں تو غسل واجب ہے۔

answered by: Talib Mohsin

About the Author

Talib Mohsin


Mr Talib Mohsin was born in 1959 in the district Pakpattan of Punjab. He received elementary education in his native town. Later on he moved to Lahore and passed his matriculation from the Board of Intermediate and Secondary Education Lahore. He joined F.C College Lahore and graduated in 1981. He has his MA in Islamic Studies from the University of Punjab. He joined Mr Ghamidi to learn religious disciplines during early years of his educational career. He is one of the senior students of Mr Ghamidi form whom he learnt Arabic Grammar and major religious disciplines.

He was a major contributor in the establishment of the institutes and other organizations by Mr Ghamidi including Anṣār al-Muslimūn and Al-Mawrid. He worked in Ishrāq, a monthly Urdu journal, from the beginning. He worked as assistant editor of the journal for many years. He has been engaged in research and writing under the auspice of Al-Mawrid and has also been teaching in the Institute.

Answered by this author