سوال و جواب

14-Nov-2009 :تاریخ اشاعت
1484 :ہٹس

نسل کا انتساب مرد کی طرف یا عورت کی طرف

نسلِ عام طور سے مردوں سے منسوب ہوتی ہے یا چلتی ہے، کیایہ اسلامی رویہ ہے؟

:سوال

یہ کوئی اسلامی رویہ نہیں ہے۔ اس کی واضح مثال سیدنا مسیح علیہ السلام ہیں۔ وہ بن باپ کے پیدا کیے گئے اور مسیح ابن مریم ہو گئے۔ ان کی اگر آگے شادی ہوتی تو کیا ان کی نسل نہ چلتی؟ یہ تو ایک عام روایت ہے۔ اسلام نے اس معاملے میں کوئی قاعدہ ضابطہ بنا کے لوگوں کو پابند نہیں کیا۔ یہ مغرب کی روایت تھی کہ جس میں عورت کی آزادانہ شخصیت تسلیم نہیں کی جاتی تھی۔ یہ بیگم فلاں اور مسز فلاں کا اسلوب اصل میں مغرب کا دیا ہوا ہے۔ رسالت مآب صلی اللہ علیہ وسلم کی ازواجِ مطہرات کے بارے میں یا صحابیات کے بارے میں یہ تعبیر اختیار نہیںکی گئی۔ سیدہ اسماء سیدہ اسماء ہی ہیں۔ عرب میں یہ رواج تھا کہ اس میں باپ کا نام لیا جاتا تھا، لیکن پھر ہمیشہ باپ ہی کا نام لیا جاتا تھا اور وہ بیٹے کے بارے میں بھی لیا جاتا تھا اور بیٹی کے بارے میں بھی لیا جاتا تھا۔

:جواب
:تحریر

View My Stats
Copyright 2014 © Al-Mawrid. Al rights Reserved.